پی ٹی آئی نے نیب کے چیئرمین کی تقرری پر سوال اٹھایا

Oct 10, 2017 04:58 PM IST | Updated on: Oct 10, 2017 04:58 PM IST

اسلام آباد۔ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے قومی احتساب بیورو (نیب) کے سربراہ کے طور پر ریٹائرڈ جج جاوید اقبال کی تقرری پر سوال اٹھاتے ہوئے اسے غیرواضح قرار دیا ہے۔ پارٹی کے سینٹرل میڈیا ڈیپارٹمنٹ کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ تحریک انصاف نے نیب کے نئے چیئرمین کے طور پر جسٹس اقبال کی تقرری پر تبادلہ خیال کیا۔ اجلاس کے دوران پارٹی قیادت نے جسٹس اقبال کی اہلیت پرسوال اٹھایا ہے۔ پارٹی نے کہا کہ ان کی تقرری کے پس پردہ کوئی واضح مقصد نہیں تھا۔

پاکستانی انگریزی اخبار ڈان کے مطابق، پارٹی کے صدر عمران خان نے سینئر رہنماؤں سے میٹنگ کی اور اس کی صدارت بھی کی۔ پارٹی نے اپنی لیگ ٹیم کی بھی میٹنگ کی۔ حالانکہ اس سے قبل گزشتہ اتوار کو نیشنل اسمبلی میں اپوزیشن کے رہنما خورشید شاہ نے کہا تھا کہ نیب کے چیئرمین کے طور پر جسٹس جاوید اقبال کی تقرری کے لئے اتفاق رائے بنی تھی۔ حکومت نے جسٹس اقبال کی تقرری کے لئے نوٹیفکیشن بھی جاری کردی ہے۔ تقرری کا نوٹیفکیشن قانون و انصاف کی وزارت کی جانب سے جاری کیا گیا ہے۔ جسٹس اقبال 2011 تک سپریم کورٹ کے جج رہ چکے ہیں ۔

پی ٹی آئی نے نیب کے چیئرمین کی تقرری پر سوال اٹھایا

عمران خان: فائل فوٹو۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز