پوتن نے بھی خفیہ اطلاعات کا اشتراک کئے جانے کی تردید کی

May 18, 2017 01:56 PM IST | Updated on: May 18, 2017 01:56 PM IST

ماسکو۔ دہشت گرد تنظیم اسلامک اسٹیٹ (آئی ایس ) کے خلاف چلائی جانے والی مہم کے بارے میں روس کے ساتھ خفیہ اطلاعات کا اشتراک کرنے کے الزام کا سامنا کررہے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے دفاع میں سامنے آتے ہوئے روسی صڈر ولادیمر پوتن نے بھی ان الزامات کو بے بنیاد بتایا۔ واشنگٹن پوسٹ کی رپورٹ کے مطابق مسٹر ٹرمپ نے روس کے وزیر خارجہ سارجئی لاووریو اور واشنگٹن میں روس کے سفیر سارجئی کسلیک سے گزشتہ ہفتے اوول آفس میں ملاقات کی تھی اور ان کے بے حد خفیہ اطلاعات کا اشتراک کرتے ہوئے امکان ظاہر کیا تھا کہ آئی ایس کاروباری پروازوں میں دہشت گردانہ حملوں کو انجام دینے کے لئے پورٹیبل کمپیوٹروں کا استعمال کرسکتا ہے۔

امریکی صدر ٹرمپ نے ان الزامات سے انکار کیا تھا اور اب مسٹر پوتن نے بھی اس سے انکار کیا ہے۔ مسٹر پوتن نے کہا کہ اگر امریکی کانگریس ار سینیٹ درخواست کرتے ہیں تو وہ اس میٹنگ کی ریکارڈنگ جاری کردیں گے۔ اس سے پہلے وائٹ ہاؤس کے قومی سلامتی کے مشیر ایچ آر میک ماسٹر نے نامہ نگاروں سے کہا تھا کہ مسٹر ٹرمپ پر روس کے ساتھ آئی ایس کو لے کر خفیہ اطلاعات اشتراک کرنے کی بات بکواس ہے اور اس میں کوئی حقیقت نہیں ہے۔

پوتن نے بھی خفیہ اطلاعات کا اشتراک کئے جانے کی تردید کی

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز