قاہرہ : مصری پارلیمنٹ نے بین الاقوامی فٹ بال فیڈریشن ’فیفا‘ سے پرزور مطالبہ کیا ہے کہ وہ 2022ء میں ہونے قطرکی میزبانی میں فٹ بال ورلڈ کپ کے انعقاد کا فیصلہ واپس لے۔لعربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مصری پارلیمنٹ میں کھیل اور امور نوجوانان کمیٹی کے چیئرمین انجینیر محمد فرج عامر نے ایک بیان میں کہا کہ پارلیمنٹ نے ‘فیفا‘ کی جنرل اسمبلی سے ہنگامی اجلاس منعقد کرنے اور فٹ بال ورلڈ کپ 2022ء کی قطر کی میزبانی کا فیصلہ واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

اب فٹ بال ورلڈ کپ 2022 کی قطری میزبانی پر بھی منڈلانے لگا خطرہ

Loading...

مسٹرفرج عامر کا کہنا ہے کہ فیفا سے ہمارا پرزور مطالبہ ہے کہ وہ دو ہزار بائیس کے فٹ بال ورلڈ کپ کی میزبانی دوحہ سے واپس لے کر کسی دوسرے عرب ملک کو اس ورلڈ کپ کی میزبانی کا موقع دے۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ مطالبہ نہ صرف مصر کی جانب سے کیا گیا ہے بلکہ بحرین، کویت ، الجزائر اور ردن کی طرف سے بھی یہ مطالبہ سامنے آچکا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ عرب اقوام اور فٹ بال کے شوقین دہشت گردی کے معاونت کار قطر کی میزبانی میں 2022ء کے فٹ بال ورلڈ کپ کے انعقاد کے سخت مخالف ہیں۔