قطر کو حماس اور اخوان المسلمون کی امداد کو روکنا ہو گا: سعودی وزیر خارجہ

Jun 07, 2017 04:18 PM IST | Updated on: Jun 07, 2017 04:19 PM IST

ریاض۔ سعودی عرب کے وزیر خارجہ عادل الجیبر نے کہا ہے کہ خلیجی ملکوں کے ساتھ رشتوں کی بحالی سے قبل قطر کو فلسطینی گروپ حماس اور مصر کی اخوان المسلمون جیسی تنظیموں کی امداد کو بند کرنا ہو گا۔ اپنے دورہ فرانس کے دوران ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے عادل الجبیر نے کہا کہ سعودی عرب کا مقصد قطر کو نقصان پہنچانا ہرگز نہیں مگر اسے درست فیصلے کرنے کا ایک اور موقع دینا ہے۔ اب یہ قطر پر منحصر ہے کہ آیا وہ کون سا راستہ منتخب کرتا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق، انہوں نے مزید کہا کہ پڑوسی ملکوں کی طرف سے قطر کے خلاف اٹھائے گئے بعض اقتصادی اقدامات کا مقصد بھی دوحہ کو اپنی پالیسی تبدیل کرنے اور انتہا پسند گروپوں سے ناطہ توڑنے پر قانع کرنا ہے۔ توقع ہے کہ منطق اور عقل قطر کو درست سمت میں فیصلے کرنے پر قائل کرنے میں کامیاب ہوجائیں گے۔ ایک سوال کے جواب میں سعودی وزیرخارجہ نے کہا کہ قطر کے خلاف اٹھائے گئے اقدامات کافی ہیں۔ ان فیصلوں کے نتیجے میں قطر کر غیرمعمولی دباؤ بڑھے گا اور قطری عوام ان کے نتائج کا متحمل ہونا پسند نہیں کریں گے۔

قطر کو حماس اور اخوان المسلمون کی امداد کو روکنا ہو گا: سعودی وزیر خارجہ

سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر: تصویر، رائٹرز

خیال رہے کہ سعودی وزیرخارجہ ایک ایسے وقت میں فرانس کےدورے پر پیرس پہنچے ہیں جب حال ہی میں سعودی عرب، امارات، بحرین، مصر سمیت سات ممالک نے قطر سے سفارتی تعلقات منقطع کر لئے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز