قطر نے عرب ممالک کے مطالبات کو غیر حقیقی قرار دیا ، تاہم جلد ہی سرکاری موقف ظاہر کرنے کا اعلان

Jun 24, 2017 09:16 AM IST | Updated on: Jun 24, 2017 09:17 AM IST

قطر کی وزارت خارجہ نے عرب ممالک کی طرف سے تعلقات کی بحالی کے لیے پیش کردہ 13 نکاتی مطالبات کو ’غیر حقیقی‘ قرار دیتے ہوئے ان پر جلد سرکاری موقف ظاہر کرنےکا اعلان کیا ہے۔ خبر رساں ادارے’رائٹرز‘ نے قطری وزارت خارجہ کا ایک بیان نقل کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ کویت کے احترام اور علاقائی سلامتی کی خاطر ہم چار ملکوں کی طرف سے پیش کردہ مطالبات پرغور کر رہے ہیں، تاہم دوحہ ان مطالبات کو ’خلاف منطق‘ سمجھتا ہے۔

خیال رہے کہ گذشتہ روز سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، بحرین اور مصر نے کویت کے ذریعے قطری حکومت تک اپنے مطالبات کی ایک فہرست پہنچائی تھی۔ جن میں قطر کے الجزیرہ کو بند کرنے اور ایران کے ساتھ تعلقات میں کمی لانے کے مطالبات شامل ہیں۔ یہ اطلاع بائیکاٹ کرنے والے ممالک میں سے ایک کے اعلی اہلکار نے دی ہے۔

قطر نے عرب ممالک کے مطالبات کو غیر حقیقی قرار دیا ، تاہم جلد ہی سرکاری موقف ظاہر کرنے کا اعلان

محمد بن عبد الرحمن آل ثانی

سعودی عرب ، امارات، مصر اور بحرین کی طرف سے تیار کی گئی مطالبات کی فہرست میں قطر سے ملک میں واقع ترک فوجی اڈے کو بھی بند کرنے اور اپنی سرزمین پر موجودہ تمام مطلوبہ دہشت گردوں کو متعلقہ ممالک کے حوالے کرنے کے مطالبے بھی شامل ہیں۔ قطر کا بائیکاٹ کرنے والے ممالک نے ان مطالبات پر عمل آوری کے لئے قطر کو 10 دنوں کا وقت دیا ہے۔ مطالبات کی یہ فہرست اس بحران میں ثالثی کرنے والے کویت کے ذریعہ بھیجا گیا ہے۔

 

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز