کام کی بات: میں اپنے عضو کی لمبائی کیسے بڑھا سکتا ہوں؟

انسانی نسل جتنی قدیم ہے، اتنا ہی یہ سوال بھی کہ کیا عضو (لنگ) کے سائز (طوالت) سے سیکس کے مزہ پر فرق پڑتا ہے۔ مردوں میں اس سوال کو لے کر ہمیشہ سے تمام طرح کے خدشات اور غلط تصورات پیدا ہوتے رہے ہیں۔

Apr 14, 2018 11:18 PM IST | Updated on: Apr 28, 2018 01:30 PM IST

انسانی نسل جتنی قدیم ہے، اتنا ہی یہ سوال بھی کہ کیا عضو (لنگ) کے سائز (طوالت) سے سیکس کے مزہ پر فرق پڑتا ہے۔ مردوں میں اس سوال کو لے کر ہمیشہ سے تمام طرح کے خدشات اور غلط تصورات پیدا ہوتے رہے ہیں۔

سوال: میں اپنے عضو (لنگ) کے سائز کو لے کر بہت پریشان رہتاہوں۔ کیا اس کی سائز کو بڑھایاجا سکتاہے؟

کام کی بات: میں اپنے عضو کی لمبائی کیسے بڑھا سکتا ہوں؟

کئی بار مردوں میں اپنے عضو کی لمبائی کو لے کر بے اطمینانی کی کیفیت رہتی ہے۔ آج انٹر نیٹ اور اسمارٹ فون کے زمانے میں گمراہ کرنے والے اشتہارات کی بھی کوئی کمی نہیں ہے، جس کے سبب مرداپنے عضو کی لمبائی کو بڑھانے کے چکر میں پھنس جاتے ہیں اور گمراہ ہوتے رہتے ہیں۔

دنیا میں لنگ کی لمبائی بڑھانے کے لئے کوئی بھی کریم، دوا، تیل یا پمپ نہیں آتا ہے۔ اس طرح کاکوئی بھی اشتہار گمراہ کن ہوتاہے اور اس پر یقین نہیں کرنا چاہئے۔ صرف آپریشن کے ذریعہ عضو کی لمبائی بڑھائی جاسکتی ہے۔ یہ آپریشن دو سے تین گھنٹے چلتا ہے اور اس کے ذریعہ ایک سے چار انچ تک بڑھایا جاسکتا ہے۔

تاہم یہاں ایک خاص بتانا چاہوں گا کہ آپ کو اس آپریشن کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ اگر آپ یہ آپریشن کرا بھی لیں تو یقین مانئے کہ اس سے آپ کے ساتھی کو ملنے والے مزہ میں کوئی فرق نہیں پڑے گا۔ یہاں تک کہ آپ کے جسمانی مزہ پر بھی اس سے کوئی فرق نہیں پڑے گا۔ یہ ایک طرح سے ذہنی اطمینان ضرور دے سکتا ہے، لیکن آپ کو اس کی ضرورت ہی اس لئے محسوس ہورہی ہے کیونکہ آپ اس غلط فہمی کا شکار ہوگئے ہیں کہ عضو کی لمبائی سیکس میں مزہ دینے سے متعلق ہے۔

حقیقت تو یہ ہے کہ جسمانی تعلقات میں جومزہ آتاہے، اس کا عضو کی لمبائی سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔ یہ ایک گمراہ کن بات ہے، جو ماضی سے مردوں کا ذہنی سکون کو ختم کرتارہا ہے۔ اسی فکر مندی اور غلط فہمی کا فائدہ گمراہ کن اشتہارات اٹھاتے ہیں۔

انسانی نسل جتنی قدیم ہے، اتنا ہی یہ سوال بھی کہ کیا عضو کی لمبائی سے سیکس کے درمیان آنے والے مزہ پر فرق پڑتا ہے؟ مردوں میں اس سوال کو لے کر ہمیشہ سے تمام طرح کے خدشات اور غلط تصورات پیدا ہوتے رہے ہیں۔ ہرمرد کے من میں یہ خیال رہتا ہے کہ اس کے عضو کی لمبائی دوسرے مردوں کے مقابلے چھوٹا ہے۔ وہ اس سوال کو لے کر ہمیشہ فکر مند رہتے ہیں اور بہت سارے معاملوں میں تواحساس کمتری کا شکار ہوجاتے ہیں۔ بلو فلموں کا بھی اس میں بڑا رول ہے۔ بلو فلموں کے ہیرو کو ایکشن میں دیکھ کر بھی مرد احساس کمتری کا شکار ہوجاتے ہیں۔

حالانکہ جیسے فلموں میں دکھایاجاتا ہے کہ ہیرو ایک ساتھ دس غنڈوں کو اکیلے مار گراتا ہے، وہ بڑی زندگی دینے والا ہے اور بہت طاقتور ہے، لیکن وہ سچ نہیں ہے، اسی طرح سے بلو فلموں میں دکھائی جارہی چیزیں بھی عام سرگرمی نہیں ہیں۔ ہم دس غنڈوں کو ایک ساتھ مار گرانے والے ہیرو کے ساتھ  اپنا موازنہ کرکے احساس کمتری کا شکار ہوتے ہیں۔ کیونکہ ہم جانتے ہیں کہ یہ سچ نہیں ہے۔ اسی طرح بلو فلموں میں دکھائی جارہی چیزوں اور پورن اسٹار کی سرگرمیوں سے بھی اپنا موازنہ نہیں کرنا چاہئے اور نہ ہی اسے لے کر دل میں کسی قسم کی غلط فہمی پالنی چاہئے۔

ری کمنڈیڈ اسٹوریز