پارٹی کی دوبارہ تشکیل ضروری: لی پین

May 08, 2017 02:12 PM IST | Updated on: May 08, 2017 02:12 PM IST

پیرس۔ فرانس میں ہوئے صدارتی انتخابات میں ایمینوئل میکرون سے ہار کا سامنا کرنے کے بعد کٹر نیشنلسٹ رہنما میرین لی پین نے پارٹی میں وسیع تبدیلی کرکے نیشنلسٹ پارٹی نیشنل فرنٹ(این ایف) کو اہم اپوزیشن میں بدلنے کا وعدہ کیا ہے۔ یوروپی یونین(ای یو)اور امیگریشن مخالف پارٹی کے طورپر شناخت بنا چکی این ایف کی ساری توجہ اب جون میں ہونے والے پارلیمانی انتخابات پر ہے۔ محترمہ پین نے مانا کہ انتخابات سے پہلے پارٹی میں بڑے ردوبدل کی ضرورت ہے۔ اپنے حامیوں سے خطاب کرتے ہوئےانہوں نے کہا،’’ہمیں مضبوطی سے خود میں تبدیلی کرنی چاہئے۔ میں ایک نیا سیاسی اسٹیج بنانےکے لئے ہماری تحریک کی اس بڑی تبدیلی کو شروع کرنےکی تجویز رکھوں گی۔‘‘ این ایف کے نائب سربراہ فلوریئن فلیپوٹ نے کہا کہ چار دہائی پرانی اس پارٹی کو نیا نام نیشنل فرنٹ نہیں رہے گا۔ محترمہ پین کے والد نیشنل فرنٹ کے اہم رہنماؤں میں سے ایک رہے ہیں اور نسلی تبصرے کی وجہ سے انہیں کئی بار جیل جانا پڑا۔ محترمہ پین نےاپنے خطاب میں پارٹی کانام بدلنے کے بارے میں کچھ بھی نہیں کہا۔

محترمہ پین نے کہا کہ انتخابات کے دوسرے مرحلے میں قوم پرستوں اور گلوبلائزیشن کے حامیوں کے درمیان مقابلہ تھا۔ انہوں نے کہا، ’’میں تمام محب وطن سے اپیل کرتی ہوں کہ فرانس میں فیصلہ کن جنگ کا حصہ بنیں۔ آنے والے مہینوں میں فرانس کو آپ کی ضرورت ہے۔‘‘ صدارتی انتخابات میں مسٹر میكرون سے 65 کے مقابلے 35 فیصد ووٹ حاصل کرنے والی محترمہ پین کے لیے آگے کا راستہ کافی چیلنج بھرا ہے۔ موجودہ پارلیمنٹ کے ایوان زیریں میں پارٹی کے دو رہنما ہیں اور جون میں ہونے والے پارلیمانی انتخابات کے لئے اوپینین پول کے اعداد و شمار میں ان کی پارٹی کو 15-25 سیٹیں ملنے کا اندازہ ظاہر کیا گیا ہے۔ اس اوپینین پول کے مطابق منتخب ہوئےمسٹر میكرون کی پارٹی این مارش کے سب سے بڑی پارٹی کے طور پر ابھر کر سامنے آنے کا اندازہ ہے۔

پارٹی کی دوبارہ تشکیل ضروری: لی پین

میرین لی پین: رائٹرز

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز