روہنگیا کے خلاف تشدد روکنے کی ضرورت ہے: ٹلرسن

Nov 15, 2017 12:05 PM IST | Updated on: Nov 15, 2017 12:05 PM IST

ینگون۔  امریکہ کے وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن کی آج میانمار کے فوجی سربراہ سے ملاقات ہو گی جس میں روہنگیا مسلمانوں کے خلاف تشدد کو روکنے کے لئے وہ دباؤ بنائیں گے۔ امریکی محکمہ خارجہ کے ایک اہلکار نے منیلا میں صحافیوں سے کہا کہ میانمار مسلح افواج کے کمانڈر ان چیف جنرل من آنگ هلانگ سے ملاقات کے دوران مسٹر ٹلرسن روہنگیا کے خلاف تشدد کو روکنے کا مسئلہ نمایاں طور پراٹھائیں گے۔

فوج کی طرف سے 25 اگست کے بعد جاری تشدد کی وجہ سے چھ لاکھ سے زیادہ روہنگیا مسلمان اپنی جان بچا کر بنگلہ دیش پہنچے ہیں۔ اقوام متحدہ کے ایک اعلی ترین افسر نے روہنگیا کے خلاف تشدد کو نسلی تشدد قرار دیا ہے۔ مسٹر ٹلرسن میانمار کی لیڈر آنگ سان سو چی کی سے بھی ملاقات کریں گے۔

روہنگیا کے خلاف تشدد روکنے کی ضرورت ہے: ٹلرسن

امریکہ کے وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن: فائل فوٹو۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریز نے منیلا میں آسیان سربراہی اجلاس کے دوران میانمار کی لیڈر آنگ سان سو چی کی ملاقات میں درخواست کی کہ وہ بنگلہ دیش میں رہ رہے روہنگیا پناہ گزینوں کو ملک واپسی کی اجازت دیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز