روہنگیا باغیوں کی جنگ بندی کی مدت ختم

Oct 10, 2017 05:15 PM IST | Updated on: Oct 10, 2017 05:15 PM IST

ینگون۔ میانمار کی حکومت نے آج کہا کہ روہنگیا باغیوں کی جنگ بندی کی مدت ختم ہوگئی ہے لیکن کسی بھی علاقہ سے حملہ کی کوئی رپورٹ نہیں ہے۔ روہنگیا سالویشن آرمی نے 10ستمبر کو ایک مہینہ کیلئے جنگ بندی کا اعلان کیا تھاجو آج ختم ہوگیا۔ میانمار کی حکومت ان باغیوں کو دہشت گرد قرار دیتی ہے۔ میانمار کی ریاست رخائن میں روہنگیا اقلیت کے خلاف فوج کی جاری مہم میں گزشتہ 25اگست کے بعد سے اب تک پانچ لاکھ 20ہزار روہنگیا مسلمان میانمار چھوڑ چکے ہیں ۔ اس تشدد کی دنیا کے کئی ممالک نے مذمت کی ہے۔

اقوام متحدہ نے اسے ’نسلی تشدد‘ قرار دیا ہے۔ تاہم میانمارکی حکومت نے ’نسلی قتل عام‘ کے الزامات کو مسترد کردیا ہے۔انہوں نے ارکان روہنگیا سالویشن آرمی کی جنگ بندی کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردوں کے ساتھ کسی طرح کا سودا نہیں کیا جاسکتا ہے۔ سرکار کے ایک ترجما ن نے آج کہا کہ انہیں ایسی اطلاعات ملی ہیں کہ روہنگیا سالویشن آرمی کی جانب سے حملے کئے جاسکتے ہیں ، لیکن اب تک حملہ کی کوئی رپورٹ نہیں ہے۔ باغیوں نے کل کہا تھا کہ جنگ بندی ختم ہونے کے باجود  امن و امان قائم کرنے کیلئے حکومت کی کسی بھی پہل کے ساتھ چلنے کو تیارہے۔

روہنگیا باغیوں کی جنگ بندی کی مدت ختم

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز