بنگلہ دیش میں روہنگیا کی تعداد پانچ لاکھ سے متجاوز، سنگین انسانی بحران پیدا ہونے کا خدشہ

Oct 16, 2017 01:27 PM IST | Updated on: Oct 16, 2017 01:27 PM IST

اقوام متحدہ۔ میانمار کی فوج کی طرف سے روہنگیا مسلمانوں کے خلاف جاری تشدد کی وجہ سے جان بچا کر بنگلہ دیش پہنچے پناہ گزینوں کی تعداد پانچ لاکھ 37ہوگئی ہے ۔ اقوام متحدہ کی ایک رپورٹ کے مطابق حال میں آنے والے سبھی پناہ گزینوں کو کھانا ،طبی خدمات اور مکانات کی ضرورت ہے جبکہ صرف 37ہزار خاندانوں کو ایمرجنسی کٹ دستیاب کرائی گئی ہیں۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پچھلے ہفتہ 18ہزار نئے روہنگیا پناہ گزیں بنگلہ دیش آئے ہیں ۔رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ تین لاکھ 74ہزار پناہ گزینوں کو کاکس بازار علاقہ کے کوتوپلانگ اور بولاکھالی میں رکھا گیا ہے جبکہ 89ہزار دیگر کو مقامی برادری کے مہمان کے طور پر رکھا گیا ہے ۔انھوں نے کہا کہ پناہ گزینوں کی تعداد جس تیزی سے بڑھی ہے اس سے سنگین انسانی بحران پیدا ہوسکتا ہے ۔

واضح رہے کہ میانمار میں 25اگست کو فوج پر مبینہ حملہ کے خلاف رخائن ریاست میں رہنے والے روہنگیا مسلمانوں کے خلاف کارروائی شروع کی گئی جس کی اقوام متحدہ سمیت کئی ملکوں نے مذمت کی ۔ اقوام متحدہ نے روہنگیا کے خلاف تشدد کو نسلی تشدد قراردیا ہے۔

بنگلہ دیش میں روہنگیا کی تعداد پانچ لاکھ سے متجاوز، سنگین انسانی بحران پیدا ہونے کا خدشہ

میانمار میں 25اگست کو فوج پر مبینہ حملہ کے خلاف رخائن ریاست میں رہنے والے روہنگیا مسلمانوں کے خلاف کارروائی شروع کی گئی جس کی اقوام متحدہ سمیت کئی ملکوں نے مذمت کی ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز