روہنگیا مسلمانوں کی نقل مکانی میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے: آئی او ایم

Sep 13, 2017 01:13 PM IST | Updated on: Sep 13, 2017 01:13 PM IST

نیویارک۔  اقوام متحدہ انسانی حقوق کی ایجنسی نے کہا ہے کہ میانمار سے بنگلہ دیش نقل مکانی کرنے والے روہنگیا مسلمانوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔ اقوام متحدہ کے مہاجرین کے تعلق سے بین الاقوامی تنظیم (آئی او ایم) نے بتایا کہ پچھلے 17-18 دنوں میں تقریباً تین لاکھ 70 ہزار افراد بنگلہ دیش کی سرحد پار کرچکے ہیں۔ آئی او ایم کے ترجمان  کرس لوم نے بتایا کہ اقوام متحدہ ایجنسی اور سرکار کا اندازہ تھا کہ بنگلہ دیش میں ایک لاکھ روہنگیا مسلمان پہنچ سکتے ہیں جبکہ وہاں پہلے سے ہی چھ لاکھ روہنگیا مقیم ہیں۔ لیکن مجھے لگتا ہے کہ کسی کو اتنے بڑے پیمانے پر نقل و مکانی کی امید نہیں تھی۔ مسٹر لوم نے بتایا کہ انہوں نے نقل مکانی کررہے لوگوں سے بات چیت کی ہے۔ وہ بے حد حساس اور خوف زدہ لگ رہے تھے۔

مسٹر لوم نے کہا کہ روہنگیا مہاجرین کو جہاں کہیں بھی تھوڑی سی جگہ مل رہی ہے ، سینکڑوں لوگ وہیں رہنے لگ رہے ہیں۔ خواہ چاہے وہ کیچڑ والی ہی زمین کیوں نہ ہو۔ انہوں نے بے گھروں کو کھانا، پینے کا پانی، صاف صفائی کا انتظام اور سلامتی سے متعلق اقدامات مہیا کرانے کے لئے بین الاقوامی کمیونٹی سے ایمرجنسی خدمات کے لئے کہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ روہنگیا مہاجرین کے خیموں میں سب سے پہلے جو چیز نظر آرہی ہے وہ یہ کہ بڑی تعداد میں جو بچے موجود ہیں، وہ بے حد کمزور اور بھوکے ہیں۔

روہنگیا مسلمانوں کی نقل مکانی میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے: آئی او ایم

آئی او ایم کے ترجمان کرس لوم نے بتایا کہ اقوام متحدہ ایجنسی اور سرکار کا اندازہ تھا کہ بنگلہ دیش میں ایک لاکھ روہنگیا مسلمان پہنچ سکتے ہیں جبکہ وہاں پہلے سے ہی چھ لاکھ روہنگیا مقیم ہیں۔

دریں اثنا یو این ایچ سی آر نے بتایا کہ بنگلہ دیش میں جہازوں کی مدد سے آج راحت رسانی کا سامان پہنچایا جا رہا ہے۔ یو این ایچ سی آر کے ترجمان نے بتایا کہ چارٹرڈ جہاز بوئنگ 777 ، کل 91 ٹن راحت رسانی لے کر بنگلہ دیش جارہا ہے۔ اس میں تقریباً 25 ہزار مہاجرین کے لئے کھانے کے علاوہ کمبل، چٹائیاں ، چادریں۔ ٹینٹ بنانے کا سامان شامل ہے۔ انہوں نے بتایا کہ تقریباً 1700 ٹینٹ اور دیگر راحت رسانی کا سامان لے کر جہاز آج شام تک روانہ ہوگا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز