آنگ سانگ سوکی سے نوبل انعام واپس لینے کا مطالبہ ، 3 لاکھ 65 ہزار سے زائد افراد نے آن لائن پٹیشن پرکئے دستخط

Sep 08, 2017 01:29 PM IST | Updated on: Sep 08, 2017 01:41 PM IST

ناروے : میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کے قتل عام کے خلاف ایک آن لائن پٹیشن شروع کی گئی ہے ، جس کے ذریعہ نوبل انعام کمیٹی سے آنگ سانگ سوکی کو دئے گئے نوبل انعام کو واپس لینے کا مطالبہ کیا جارہا ہے ۔ اب تک لاکھوں افراد نے آن لائن پٹیشن پر اپنے دستخط کر دیے ہیں۔

تاہم نیوز ایجنسی اے ایف پی کی رپورٹ کے مطابق ناروے کی نوبل کمیٹی نے واضح کیا ہے کہ وہ کسی بھی امن انعام پانے والے شخص سے انعام واپس نہیں لیتے کیوں کہ یہ ایوارڈ اس کام کی بنیاد پر دیاجاتا ہے جو کہ انعام حاصل کرنےکی بنیاد بنا ہو۔

آنگ سانگ سوکی سے نوبل انعام واپس لینے کا مطالبہ ، 3 لاکھ 65 ہزار سے زائد افراد نے آن لائن پٹیشن پرکئے دستخط

آنگ سان سوکی: فائل فوٹو

ویب سائٹ ’چینج ڈاٹ او آر جی‘ کی اس پیٹیشن پر اب تک تین لاکھ 65 ہزار سے زائد افراد دستخط کر چکے ہیں جو کہ ظاہر کرتا ہے کہ عالمی سطح پر میانمار کی راکھین ریاست میں روہنگیا آبادی کے ساتھ ہونے والی زیادتی پر گہری تشویش پائی جاتی ہے۔ پٹیشن میں لکھا گیا ہے کہ میانمار کی رہنما نے اپنے ملک میں انسانیت کے خلاف ہونے والے مظالم کے حوالے سے کچھ بھی نہیں کیا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز