روہنگیا مسلمانوں کی کشتی حادثے کا شکار، 19 افراد جاں بحق ، 50 سے زائد لاپتہ ، مہلوکین میں زیادہ تر خواتین اور بچے

بنگلہ دیش کے کاکس مارکیٹ سمندر کے قریب روہنگیا پناہ گزینوں سے بھری ایک کشتی کے حادثے کا شکار ہو جانے سے اس میں سوار کم از کم 15 پناہ گزینوں کے ڈوبنے سے موت ہو گئی۔

Sep 29, 2017 12:17 PM IST | Updated on: Sep 29, 2017 12:17 PM IST

ڈھاکہ: بنگلہ دیش کے کاکس مارکیٹ سمندر کے قریب روہنگیا پناہ گزینوں سے بھری ایک کشتی کے حادثے کا شکار ہو جانے سے اس میں سوار کم از کم 19  پناہ گزینوں کے ڈوبنے سے موت ہو گئی۔ جبکہ 50 سے زیادہ افراد ابھی لاپتہ ہیں ۔  پولیس نے کہا کہ کشتی میں تقریبا 100 پناہ گزین موجودتھے۔ انہوں نے کہا کہ کشتی سمندر میں ڈوبی کسی چیز سے ٹکراکر پلٹ گئی۔ حادثے کے دوران 17 لوگوں کو بچا لیا گیا جبکہ 19 افرادکی لاشیں برآمد کی گئی ہیں جس میں زیادہ تر خواتین اور بچے شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سمندر میں مزید لاشیں ملنے کا امکان ہے۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کشتی سمندر سے چند میٹر کے فاصلے پر حادثے کا شکار ہوئی۔ 22 سال کے نور الاسلام نے کہا کہ کشتی میں 100 سے زائد افراد سوار تھے اور اس میں بھی زیادہ تر خواتین اور بچے شامل تھے۔ انہوں نے کہا کہ کشتی میں ان کی والدہ، بیوی، بہن اور ایک چھوٹا بچہ شامل تھا جو سبھی حادثے میں ڈوب گئے۔ انہوں نے کہا کہ میں نے اپنے خاندان کو بچانے کے لئے پوری کوشش کی۔ لیکن میں ایسا نہیں کر سکا۔

روہنگیا مسلمانوں کی کشتی حادثے کا شکار، 19 افراد جاں بحق ، 50 سے زائد لاپتہ ، مہلوکین میں زیادہ تر خواتین اور بچے

بنگلہ دیش کے کاکس مارکیٹ سمندر کے قریب روہنگیا پناہ گزینوں سے بھری کشتی کے حادثے کا شکارہوگئی ۔ فوٹو :رائٹر

واضح رہے کہ میانمار میں 25 اگست سے جاری تشدد کے باعث پانچ لاکھ سے زیادہ روہنگیا پناہ گزین بنگلہ دیش کی سرحد میں داخل ہو گئے ہیں۔ روہنگیاپناہ گزینوں نے میانمار کی فوج پر ان کے لوگوں کو قتل کرنے اور جلانے اور ان کے ساتھ عصمت دری کرنے کا الزام لگایا ہے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز