زمبابوے: صدر موگابے کو عہدہ سے ہٹانے کیلئے پارٹی تیار

Nov 18, 2017 05:26 PM IST | Updated on: Nov 18, 2017 05:26 PM IST

ہرارے۔  زمبابوے میں حکمراں جانو- پیف پارٹی نے صدر رابرٹ موگابے کو عہدہ سے ہٹانے کے لئے کل ایک میٹنگ بلائی تھی اور اس میں کئی سیاسی فیصلے لئے گئے۔ اخبار ’ہیرالڈ ٹائمز ‘نے آج یہ اطلاع دی۔ اخبار کے مطابق پارٹی کی شاخیں10 ریاستوں میں ہیں اور فوج کے اقتدار کو ہاتھ میں لینے کے بعد پارٹی نے پہلی بار اپنی میٹنگ بلائی اور مسٹر موگابے کو عہدہ سے ہٹانے کے فیصلے کے علاوہ ان کی بیوی گریس کو بھی پارٹی سے استعفی دینے کو کہا ہے۔

پارٹی کے ایک سینئر لیڈر نے بتایا کہ پارٹی کا متفقہ فیصلہ یہی ہے کہ مسٹر موگابے کو عہدہ سے ہٹا دیا جائے اور اگر وہ اپنی مرضی سے استعفی نہیں دیتے ہیں تو انہیں پارٹی سے برخاست کیا جا سکتا ہے اور آخری مرحلہ میں ان کے خلاف مواخذے کی قرارداد لانا هوگا۔اخبار کے مطابق پارٹی اتوار کو اپنا خصوصی اجلاس بلائےگي جس میں پارٹی کے ڈھانچے میں تبدیلی اور موجودہ سیاسی واقعات پر غور کیا جائے گا۔ بتایا جا رہا ہے کہ بدھ کو اقتدار اپنے ہاتھ میں لینے کے بعد سے ہی فوج صدر کا خاص دھیان رکھ رہی ہے اور ان کے بارے میں جلد ہی کوئی فیصلہ لیا جا سکتا ہے۔

زمبابوے: صدر موگابے کو عہدہ سے ہٹانے کیلئے پارٹی تیار

زمبابوے کے صدر رابرٹ موگابے کی فائل فوٹو: رائٹرز۔

پارٹی کا یہ بھی خیال ہے کہ نائب صدر کے عہدہ سے ہٹائے گئے ایمرسن مانگاگاوا کو ان کے عہدہ پر بحال کیا جائے کیونکہ انہیں سینٹرل کمیٹی کی رضامندی کے بغیر ہٹایا گیا ہے۔ سیاسی گلیاروں میں یہ بھی چہ میگوئیاں ہورہی ہیں ہے کہ فوج انہیں اسی عہدہ پر بحال کر سکتی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز