دہشت گرد تنظیم داعش کے سرغنہ ابوبکر بغدادی کی ہلاکت کا ایک مرتبہ پھر کیا گیا دعوی

Jun 16, 2017 03:07 PM IST | Updated on: Jun 16, 2017 03:07 PM IST

دہشت گرد تنظیم اسلامک اسٹیٹ کے سربراہ ابو بکربغدادی کے مارے جانے کا ایک بار پھر دعوی کیا گیا ہے۔ اس مرتبہ روس کی وزارت دفاع نے اپنی رپورٹ میں یہ دعوی کیا ہے۔ وزارت کا کہنا ہے کہ ممکنہ طور پر 28 مئی کو ہوئے ہوائی حملے میں بغدادی کو مار گرایا گیا ہے۔ وہیں اس حملے میں 300 مزید دہشت گردوں کی موت ہوئی ہے۔

وزارت نے کہا کہ شمالی شام کے رقہ میں اسلامک اسٹیٹ کی ملٹری کونسل کی میٹنگ کو نشانہ بناکر یہ کارروائی کی گئی تھی۔ اس میں 30 آئی ایس کمانڈر اور 300 دہشت گرد موجود تھے۔

دہشت گرد تنظیم داعش کے سرغنہ ابوبکر بغدادی کی ہلاکت کا ایک مرتبہ پھر کیا گیا دعوی

خیال رہے کہ یہ پہلا موقع نہیں ہے جب بغدادی کی موت کے بارے میں دعوی کیا گیا ہے۔اس سے پہلے جون 2014 بغدادی عوامی طور پر سامنے آیا تھا۔ اس دوران وہ موصل میں داعش کے قبضہ کے بعد تقریر کرتے ہوئے نظر آیا تھا ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز