بیٹے کا نام تیمور رکھنے پر سیف علی خان نے پہلی مرتبہ کھولی زبان ، کہا : میں اسلامو فوبيا کوبخوبی جانتا ہوں

Feb 17, 2017 06:41 PM IST | Updated on: Feb 17, 2017 06:52 PM IST

ممبئی : بالی ووڈ کے اسٹار سیف علی خان اور کرینہ کپور خان کے بیٹے تیمور کی پیدائش کے بعد ہی ان کے نام کو لے کر کافی تنازع ہوا تھا۔ اب ایک ٹی وی چینل کو انٹرویو میں سیف علی خان نے اس معاملہ پر کھل کر بات چیت کی ہے۔

سیف نے کہا کہ میں اسلامو فوبیا سے پوری طرح واقف ہوں، جیسی کہ کہاوت ہے نام میں کیا رکھا ہے، اس نام سے وابستہ تاریخ کے بارے میں جانتا ہوں، لیکن میں نے اس کی وجہ سے اپنے بیٹے کا نام تیمور نہیں رکھا ہے۔ سیف نے کہا کہ میں جانتا ہوں ایک ترکی حکمران تھا ، جو ظالم تھا، لیکن اس کا نام تمور تھا اور میرے بیٹے کا نام تیمور ہے۔

بیٹے کا نام تیمور رکھنے پر سیف علی خان نے پہلی مرتبہ کھولی زبان ،  کہا : میں اسلامو فوبيا کوبخوبی جانتا ہوں

سیف نے کہا کہ میں اپنے بیٹے کا نام الیگزینڈر یا رام نہیں رکھ سکتا، تو پھر ایک اچھا مسلم نام رکھنے میں کیا برائی ہے۔ ایسا نام رکھ کر ہم اس کی سیکولر پرورش کریں گے، جس کے بعد لوگ اس سے ملیں گے ، تو کہیں گے کہ کتنا اچھا انسان ہے یہ اور اس کے ساتھ ہی اس کے نام پر بحث ختم ہو جائے گی۔

سیف نے کہا کہ ایک نام سے کچھ فرق نہیں پڑا۔ اشوکا بھی ایک پرتشدد نام ہے ۔تمور کے ایک بیٹے کا نام شاہ رخ تھا ، تو ایسے میں کیا کر سکتے ہیں ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز