قطری شہریوں کو عمرہ اور حج کی ادائیگی کے لئے ہر ممکن مدد دینے کو تیار ہیں: سعودی عرب

Jun 05, 2017 01:31 PM IST | Updated on: Jun 05, 2017 01:31 PM IST

ریاض۔ خلیجی عرب ریاست قطر کے ساتھ اپنے سفارتی تعلقات منقطع کر لینے کے بعد  سعودی عرب نے یہ وضاحت کی ہے کہ عمرہ اور حج کے لئے آنے والے قطری شہریوں کی ہر ممکن مدد کے لئے وہ تیار ہے۔ دارالحکومت ریاض سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ قطر سے سفارتی تعلقات ختم ہو جانے کے بعد سعودی شہری دوحہ کے لئے سفر نہیں کر سکتے اور نہ ہی وہ ہاں رہ سکتے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق، بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ کسی دوسری منزل کی جانب سفر کے لئے وہ قطری سرزمین بھی استعمال نہیں کر سکتے۔ سعودی عرب سے قطر کا سفر اختیار کرنے والے اور وہاں مقیم افراد دو ہفتوں کے اندر وطن واپس لوٹ آئیں۔ شاہی اعلان میں اس امر پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ سیکیورٹی خدشات کی بنا پر ہم قطری شہریوں کو سعودی عرب آنے کی اجازت نہیں دے سکتے۔ مملکت کا سفر اختیار کرنے والے اور وہاں کسی بھی سلسلے میں مقیم قطری شہری دو ہفتوں کے اندر سعودی عرب چھوڑ دیں، تاہم قطر سے عمرہ اور حج کے لئے آنے والوں کو تمام سہولیات دی جائیں گی۔

قطری شہریوں کو عمرہ اور حج کی ادائیگی کے لئے ہر ممکن مدد دینے کو تیار ہیں: سعودی عرب

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز