حضرت عیسیٰ کی نادر پینٹنگ کے اصل خریدار سعودی ولی عہد محمد بن سلمان ، کئی حلقوں کی جانب سے سخت تنقید

سعودی عرب کی ولی عہد محمد بن سلمان ایک مرتبہ پھر تنقیدوں کی زد میں ہیں ۔ اس مرتبہ میڈیا کی اس رپورٹ کی وجہ سے سعودی ولی عہد کی چوطرفہ تنقید کی جارہی ہے

Dec 08, 2017 10:03 PM IST | Updated on: Dec 08, 2017 10:05 PM IST

نیویارک: سعودی عرب کی ولی عہد محمد بن سلمان ایک مرتبہ پھر تنقیدوں کی زد میں ہیں ۔ اس مرتبہ میڈیا کی اس رپورٹ کی وجہ سے سعودی ولی عہد کی چوطرفہ تنقید کی جارہی ہے ، جس میں دعوی کیا گیا ہے کہ اٹلی کے مشہور مصور اور جینیئس لیونارڈو ڈاونِسی کی ایک تصویر 45 کروڑ ڈالر میں انہوں نے خریدی ہے۔ امریکی اخبار وال سٹریٹ جرنل کے مطابق اطالوی آرٹسٹ کی بنائی ہوئی دنیا کی مہنگی ترین پینٹنگ ' سلاوتور مندی کے خریدار سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان ہیں۔

یاد رہے کہ گذشہ ماہ نیویارک میں ہونے والی نیلامی میں 500 سال پرانی پینٹنگ 45 کروڑ ڈالر میں فروخت ہوئی تھی ، لیکن نیلام میں خریدنے والے کا نام ظاہر نہیں کیا گیا تھا۔تاہم اب وال سٹریٹ جرنل نے دعوی کیا ہے شہزادہ محمد بن سلمان نے یہ پینٹنگ خریدنے کے لیے اپنے جاننے والے کی مدد حاصل کی تھی۔

حضرت عیسیٰ کی نادر پینٹنگ کے اصل خریدار سعودی ولی عہد محمد بن سلمان ، کئی حلقوں کی جانب سے سخت تنقید

قابل ذکر ہے کہ ایک ہفتہ قبل ابوظہبی نے اعلان کیا تھا کہ یہ پینٹنگ ایک نئے میوزیم میں نمائش کے لیے رکھی جائے گی ۔ اس مہنگی پینٹنگ کی خریداری پر کئی حلقوں نے حیرت کا اظہار بھی کیا گیا ہے جب کہ بعض حلقے سعودی ولی عہد کی جانب سے سخت گیر رویے کی بجائے ان کے نرم اقدامات کو بھی سراہ رہے ہیں جن میں خواتین کو ڈرائیونگ کی اجازت، پولیس کی بے جا مداخلت کے خاتمے اور دیگر اقدامات شامل ہیں۔ شاید یہ تصویر خریدنے میں بھی ان کی یہی حکمت پوشیدہ ہوسکتی ہے۔

Loading...

_99117646_gettyimages-874564990

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز