تاریخی فیصلہ: سعودی عرب میں پہلی بار خواتین کو ڈرائیونگ کی ملی اجازت

Sep 27, 2017 09:39 AM IST | Updated on: Sep 27, 2017 11:54 AM IST

ریاض۔ سعودی عرب میں پہلی بار خواتین کو ڈرائیونگ کی اجازت دی گئی ہے۔ سعودی عرب کے سرکاری میڈیا کے مطابق، سعودی شاہ سلمان بن عبد العزیز نے تاریخ ساز فیصلہ کرتے ہوئے ایک حکم جاری کیا اور خواتین کو ڈرائیونگ کا حق دے دیا۔ سعودی شاہ سلمان کا یہ حکم 24 جون 2018 تک نافذ کیا جائے گا۔

سعودی عرب کی وزارت خارجہ نے منگل کو سرکاری ٹویٹر ہینڈل پر اس کے بارے میں جانکاری دی۔ اس کے لئے ایک کمیٹی تیار کی گئی ہے، جو ایک ماہ کے اندر رپورٹ تیار کرے گی۔ بتا دیں سعودی عرب واحد ایسا ملک ہے جہاں عورتوں کی ڈرائیونگ پر پابندی عائد ہے۔

تاریخی فیصلہ: سعودی عرب میں پہلی بار خواتین کو ڈرائیونگ کی ملی اجازت

علامتی تصویر: رائٹرز۔

شہزادہ خالد بن سلمان نے سعودی شاہ کے اس فیصلے کو 'ویژن 2030' کا حصہ بتایا ہے۔ اس فیصلہ سے سعودی عرب کی معیشت اور خواتین کے کام کرنے کی صلاحیت میں اضافہ ہونے کی توقع ہے۔ تاہم، اس حکم میں شرعی قانون کا بھی دھیان رکھنے کی بات کہی گئی ہے۔

خیال رہے کہ سعودی عرب میں خواتین کے گاڑی چلانے کا معاملہ ایک عرصےسے وجہ نزاع چلا آرہا تھا۔ ملک میں خواتین کو گاڑی چلانے کی قانونی اجازت نہ ہونے کے باعث اکثر خواتین کو گاڑی چلانے کی پاداش میں گرفتار ہونا پڑتا تھا۔

 

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز