قطر: حکمراں خاندان سے سیاسی اختلافات رکھنے والے الشیخ سلطان بن سحیم کے محل پر سیکورٹی فورسز کا دھاوا

غیرملکی ذرائع ابلاغ نے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ گذشتہ جمعرات کو قطر کے دارالحکومت دوحہ میں واقع حکمران خاندان کے اہم رہ نما سلطان بن سحیم آل ثانی کے محل پر سیکیورٹی اہلکاروں نے دھاوا بولا

Oct 17, 2017 01:14 PM IST | Updated on: Oct 17, 2017 01:14 PM IST

دوحہ : غیرملکی ذرائع ابلاغ نے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ گذشتہ جمعرات کو قطر کے دارالحکومت دوحہ میں واقع حکمران خاندان کے اہم رہنما سلطان بن سحیم آل ثانی کے محل پر سیکیورٹی اہلکاروں نے دھاوا بولا، گھر میں توڑپھوڑ کی، اہم دوستاویزات اور سامان بھی قبضے میں لے لیا گیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ نے اسکائی نیوز ٹی وی چینل کی ایک رپورٹ کے حوالے سے بتایا ہے کہ حکمراں خاندان سے بعض امور میں سیاسی اختلافات رکھنے والے سلطان بن سحیم آل ثانی قطری حکومت کی انتقامی کارروائیوں کا شکار ہیں۔انہیں خلیجی ممالک کی حمایت میں بات کرنے کی پاداش میں قطری حکومت کی طرف سے انتقامی کارروائیوں کا سامنا ہے۔

قطر: حکمراں خاندان سے سیاسی اختلافات رکھنے والے الشیخ سلطان بن سحیم کے محل پر سیکورٹی فورسز کا دھاوا

سلطان بن سحیم آل ثانی

اسکائی نیوز چینل کے مطابق گذشتہ جمعرات کو شب نو سے صبح تین بجے تک 15 قطری سیکیورٹی اہلکاروں نے الشیخ سلطان بن سحیم آل ثانی کے محل کا محاصرہ کیے رکھا۔ اس دوران محل سے 137 بیگ اور لوہے کے کئی صندوق جن میں دستاویزات اور دیگر سامان تھا وہاں سے نکال لیے گئے۔

ان میں سلطان سحیم کے والد سحیم بن حمد آل ثانی کے دور کی اہم دستاویزات بھی شامل تھیں جو ملک کے پہلے وزیرخارجہ تھے۔ ان دستاویزات میں غیر معمولی معلوماتی، گراں قیمت سیاسی دستاویزات اور مصر کی دقیق ریکارڈنگ بالخصوص سنہ 1960ء سے ان کی وفات 1985ء تک کے عرصے کی دستاویزات شامل تھیں۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز