چینی میڈیا نے لگائے سنگین الزام، لكھا، سکم پر ہندوستان نے کیا تھا قبضہ

Jul 06, 2017 02:24 PM IST | Updated on: Jul 06, 2017 02:24 PM IST

نئی دہلی۔ سکم کے ڈوکا لا کو لے کر چل رہے تنازعہ کے درمیان چینی میڈیا میں مسلسل ہندوستان کے خلاف کچھ نہ کچھ لکھا جا رہا ہے۔ چین کے سرکاری اخبار گلوبل ٹائمز نے لکھا ہے کہ ہندوستان نے بھوٹان کو دبا رکھا ہے اور اسی دباؤ کے چلتے بھوٹان نے چین اور اقوام متحدہ سیکورٹی کونسل کے دیگر ممالک سے سفارتی تعلقات نہیں رکھے ہیں۔ اخبار نے الزام لگایا کہ ہندوستان نے بھوٹان کی سفارتی خودمختاری اور قومی سلامتی کو کنٹرول کر رکھا ہے۔

گلوبل ٹائمز نے دعوی کیا ہے کہ ہندوستان نے اپنی طاقت کا استعمال کر سکم کو اس چھوٹے ملک (بھوٹان) سے الگ کر اپنا حصہ بنا لیا۔ اخبار نے لکھا، "60 اور 70 کی دہائی میں بھوٹان نے سکم کی مخالفت کی تو ہندوستان نے اپنی فوج کی مدد سے اسے دبا دیا۔" اخبار نے لکھا، " ہندوستان نے 1975 میں سکم کے بادشاہ کو معزول کر دیا اور یہاں کی پارلیمنٹ کو مینوپلیٹ کرکے ایک ریفرینڈم لے کر آیا جس سے سکم ہندوستان کا حصہ بن گیا۔ سکم کو اس طرح چھینے جانے سے بھوٹان ڈر گیا اور ہندوستان کی ہر بات ماننے کو مجبور ہو گیا۔ "

چینی میڈیا نے لگائے سنگین الزام، لكھا، سکم پر ہندوستان نے کیا تھا قبضہ

اخبار نے لکھا، "چین کا تعمیراتی مقام ہندوستان کے سلی گوڑی کوریڈور کے پاس ہے۔ یہ ہندوستان کے شمال مشرق علاقے کی جانب جانے کا اہم راستہ ہے۔ سڑک بن جانے کے بعد ممکنہ حملے کے خوف سے ہندوستانی فوج نے چین کی سرحد میں دراندازی کی اور ہماری سڑک کی تعمیر کو روک دیا۔ "

"نئی دہلی کا علاقائی تسلط بڑھتا ہی جا رہا ہے اور اسے (چین کو) اکسانے کی بھاری قیمت ادا کرنی پڑے گی۔ دنیا کو یہ دیکھنا چاہئے کہ ہمالیائی ممالک میں ہندوستان کس طرح داداگیری کر رہا ہے۔ بین الاقوامی تنظیموں کو بھوٹان کی صورت حال پر توجہ دینی چاہئے اور ہندوستان کو اس چھوٹے ملک پر دباؤ بنانے سے روکنا چاہئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز