شتروگھن سنہا نے بی جے پی کو پھر دکھایا آئینہ ، کہا : نوٹ بندی اور جی ایس ٹی سے لوگوں میں کافی غصہ

Nov 01, 2017 10:59 PM IST | Updated on: Nov 01, 2017 11:00 PM IST

نئی دہلی : بی جے پی کے ممبر پارلیمنٹ شتروگھن سنہا نے کہا ہے کہ لوگوں میں جی ایس ٹی اور نوٹ بندی کو لے کافی غصہ ہے اور یہ بات واضح ہے کہ گجرات اسمبلی انتخابات بی جے پی کیلئے صرف ایک الیکشن ہی نہیں بلکہ ایک چیلنج ہے۔ کانگریسی لیڈر منیش تیواری کی ایک کتاب پر منعقدہ پینل مباحثہ میں سنہا نے تیواری کے ساتھ اسٹیج شیئر کرتے ہوئے معاشی معاملات پر اپنے تبصروں کا دفاع کیا اور کہا کہ اگر ایک وکیل معاشی معلات کی بات کرسکتا ہے ، اگر ایک ٹی وی اداکارہ فروغ انسانی وسائل کی وزیر بن سکتی ہے اور ایک چائے والا وزیر اعظم بن سکتا ہے تو میں اقتصادی معاملات کی باتیں کیوں نہیں کرسکتا ۔

تاہم شترو گھن سنہا نے کسی کا نام نہیں لیا ، مگر ان کا اشارہ واضح طور پر وزیر خزانہ ارون جیٹلی ،  ایچ آر ڈی کی سابق وزیر اسمرتی ایرانی اور وزیر اعظم مودی کی طرف ہی تھا ۔ سنہا نے یہ بھی کہا کہ وہ اپنی پارٹی کو چیلنج نہیں کررہے ہیں بلکہ بی جے پی اور قوم کے مفاد میں اسے آئینہ دکھا رہے ہیں۔

شتروگھن سنہا نے بی جے پی کو پھر دکھایا آئینہ ، کہا : نوٹ بندی اور جی ایس ٹی سے لوگوں میں کافی غصہ

اداکار سے ساستداں بنے شتروگھن سنہا نے مزید کہا کہ نوٹ بندی ، جی ایس ٹی اور بے روزگاری کو لے کر لوگوں میں غصے کو دیکھتے ہوئے میں یہ نہیں جانتا کہ بی جے پی کو کتنی سیٹیں ملیں گی ، لیکن یقینی طور پر یہ الیکشن ایک خاص چیلنج ہونے جارہا ہے ۔ تاہم شتروگھن سنہا نے یہ بھی کہا کہ بی جے پی متحد ہوکر اپنی سیٹیں بڑھا بھی سکتی ہے اور اسے اس الیکشن کو ہلکے میں نہیں لینا چاہئے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز