اذان سے متعلق ٹویٹ کرکے چوطرفہ تنقید کی زد پر آئے سونو نگم نے کی اب تنازع ختم کرنے کی اپیل

اذان سے متعلق تبصرہ کے بعد سے ہی ان کے خلاف اور ان کی حمایت میں سوشل میڈیا سمیت متعدد پلیٹ فارموں پر بیان بازیوں کا سلسلہ جاری ہے۔

Apr 26, 2017 07:48 PM IST | Updated on: Apr 26, 2017 07:48 PM IST

ممبئی : لاوڈاسپیکر پر اذان سے متعلق تبصرہ کے بعد چوطرفہ تنقید کی زد میں آئے معروف گلوکار سونو نگم نے اب تنازع کو ختم کرنے کی اپیل کی ہے۔ خیال رہے کہ اذان سے متعلق تبصرہ کے بعد سے ہی ان کے خلاف اور ان کی حمایت میں سوشل میڈیا سمیت متعدد پلیٹ فارموں پر بیان بازیوں کا سلسلہ جاری ہے۔ تاہم اب مانا جارہا ہے کہ ان کے اس نئے ٹویٹ سے تنازع تھم سکتا ہے۔

سونو نگم نے اپنے ٹوئٹر ہینڈل پر لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ اس معاملہ کو مزید طول نہ دیں اور اس کو آگے مزید نہ بھڑكائیں ۔ سونو نگم نے ٹویٹ کرکے کہا کہ '' دوستو!، میری حمایت یا مخالفت میں، اتفاق یا اختلاف میں، معاملہ کو مزید طول دینے کی ضرورت نہیں ہے، مستقبل کی طرف دیکھیں اور آگے بڑھیں۔ دعائیں۔

اذان سے متعلق ٹویٹ کرکے چوطرفہ تنقید کی زد پر آئے سونو نگم نے کی اب تنازع ختم کرنے کی اپیل

قابل ذکر ہے کہ سونو نگم نے 17 اپریل کی صبح ساڑھے پانچ بجے کئی ٹویٹ کئے تھے ، جس میں انہوں نے لاوڈاسپیکر سے اذان کو ایک شور بتایا تھا اور اپنی شکایت درج کرانے کی کوشش کی تھی ۔ سونو نے کہا تھا کہ میں مسلمان نہیں ہوں ، لیکن پھر بھی مجھے روزانہ صبح 5 بجے اذان کے شور سے اٹھنا پڑتا ہے۔ سونو نگم نے ساتھ ہی ساتھ گرودوارہ اور مندروں میں بھی لاؤڈ سپیکر کے استعمال پر سوالات کھڑے کئے تھے۔ سونو نگم کے ان ٹویٹ کے بعد سے ہی ان کی چوطرفہ تنقید شروع ہوگئی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز