کارپوریٹ کالجز کی تاریک حقیقت ، تلنگانہ اور آندھراپردیش میں 60 دن میں 50 طلبہ کی خودکشی سے سنسنی

Oct 19, 2017 02:05 PM IST | Updated on: Oct 19, 2017 02:05 PM IST

حیدرآباد: دو ماہ سے کم عرصہ میں طلبہ کی خودکشی کے 50واقعات ۔دونوں تلگو ریاستوں تلنگانہ اور اے پی کے تاریک حقیقت ہے۔کالجس کے انتظامیہ کے دباو کو برداشت نہ کر پانے کے نتیجہ میں ان طلبہ نے انتہائی اقدام کیا ۔ تجارتی طرز کے یہ تعلیمی ادارے طلبہ کو امتحانات میں کامیاب کروانے کے دعوے تو کرتے ہیں تاہم یہ ادارے زندگی جینے کا حق دینے میں ناکام ہوگئے ہیں کیونکہ ان کے دباو سے تنگ آکر ہی طلبہ کی خودکشی کے کئی واقعات سامنے آئے ہیں۔ایسے ہی ایک کارپوریٹ طرز کے کالج کی کلاس میں ایک ٹیچر کی جانب سے طالب علم کی پٹائی کا ویڈیو سامنے آیا ہے جس کی فلم بندی خفیہ طورپر کلاس روم میں ایک طالب علم نے کی ہے۔

اس ویڈیو میں دکھایا گیا ہے کہ ٹیچر ، اس طالب علم کی اس کے ساتھیوں کے سامنے بُری طرح سے پٹائی کر رہا ہے۔اس طرح کی بے عزتی ، مارپیٹ، بہتر تعلیمی مظاہرہ کے لئے دباو کے نتیجہ میں ہی طلبہ خودکشی کی راہ پر چل رہے ہیں۔ خودکشی کرنے والے ان طلبہ نے ڈاکٹرس اور انجینئرس بننے کا خواب اپنے دل میں سجائے ان کارپوریٹ طرز کے تعلیمی اداروں میں داخلے لئے تھے تاہم بہتر تعلیمی مظاہرہ کے لئے ان کارپوریٹ طرز کے تعلیمی اداروں کے دباو کے ماحول کو برداشت نہ کرتے ہوئے ان طلبہ نے یہ انتہائی اقدام کیا ہے۔

کارپوریٹ کالجز کی تاریک حقیقت ، تلنگانہ اور آندھراپردیش میں 60 دن میں 50 طلبہ کی خودکشی سے سنسنی

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز