کیرالہ : ترواننت پورم بی جے پی کے دفتر پر حملہ، چھ گاڑیوں کو پہنچایا گیا نقصان

Jul 28, 2017 08:34 PM IST | Updated on: Jul 28, 2017 08:34 PM IST

ترواننت پورم: کیرالہ کے دارالحکومت تروواننت پورم میں آج علی الصباح بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے ریاستی دفتر اور مارکسی کمیونسٹ پارٹی (سی پی ایم) کے ریاستی سکریٹری كوڈيئري بالا کرشنن اور پارٹی کارکنوں کے بہت سے گھروں پر حملے کے بعد دونوں پارٹیوں کے درمیان تنازعہ مزید بڑھ گیا ہے۔ سی پی آئی کے حامی لوگوں کے ایک گروپ نے بی جے پی کے ریاستی صدر كمانام راج شیکھرن کی کار سمیت کم از کم چھ گاڑیوں کو نقصان پہنچایا ۔ بی جے پی نے الزام لگایا ہے کہ حملہ آور سی پی ایم کارکن تھے۔ بی جے پی کے ریاستی دفتر پر ڈیڑھ بجے کے ارد گرد حملہ ہوا اس وقت مسٹر راج شیکھرن دفتر کے اندر موجود تھے۔

بی جے پی کے ایک بیان میں الزام لگایا گیا ہے کہ ایک وارڈ کونسلر کی قیادت میں جب سی پی ایم کے کارکنوں نے حملہ کیا اس وقت پولس خاموش تماشائی بنی کھڑی رہی۔ اس واقعہ کے جواب میں سی پی ایم کے ریاست سکریٹری کی رہائش گاہ پر پتھراؤ کیا گیا۔ اس کے علاوہ سی پی ایم اور بی جے پی کے کئی رہنماؤں کے گھروں پر بھی کل رات حملہ کیا گیا۔

کیرالہ : ترواننت پورم بی جے پی کے دفتر پر حملہ، چھ گاڑیوں کو پہنچایا گیا نقصان

علامتی تصویر

پولس نے پارٹی کارکنوں کے درمیان نئے سرے سے تشدد کے امکانات کو دیکھتے ہوئے سکیورٹی سخت کر دی ہے۔ اس دوران سی پی ایم کے ریاستی سکریٹری بالا کرشنن نے پرتشدد واقعات کی سخت مذمت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سی پی ایم کسی بھی سیاسی پارٹی کے دفتر پر کسی بھی حملے کی حمایت نہیں کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ میڈیکل گھوٹالے میں بی جے پی لیڈروں کے ملوث ہونے کے معاملے سے توجہ ہٹانے کے لیے بی جے پی تشدد بھڑکا رہی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز