پوتن ہلی میں باب الحوائج کا ممبئی کےعالم دین مولانا سید احمد علی کے ہاتھوں افتتاح

May 06, 2017 08:20 PM IST | Updated on: May 06, 2017 08:20 PM IST

کرناٹک۔ بنگلوروکےقریب واقع ایک دیہات میں مقامی مسلمانوں کا دیرنہ خواب اب پورا ہوا ہے۔ پوتن ہلّی نامی دیہات میں ایک خوبصورت باب الحوائج کا قیام عمل میں آیا ہے۔ حضرت عباس رضی اللہ تعالیٰ عنہ کی اس شبیہ کودیکھنےکے لئےدور دور سے لوگ پوتن ہلّی آ رہے ہیں۔ امیرالمومنین حضرت علی کے فرزند حضرت عباس رضی اللہ تعالی عنہ کی شبیہ کو ’’باب الحوائج‘‘ کہتےہیں۔ علمائے کرام کہتے ہیں کہ بلالحاظ مذہب وملت لوگ یہاں آکر فیض اُٹھا سکتے ہیں۔

بنگلورو سے تقریبا 65 کیلومیٹر کی دوری پرپوتن ہلّی نامی دیہات آباد ہے۔ اس گاؤں کی آبادی تقریبا تین ہزارہے۔ ان میں شیعہ مسلمانوں کی اکثریت ہے۔ گاؤں کے لوگوں نے مل جل کرایک نیا باب الحوائج تعمیر کیا ہے۔ اس پُرنورعمارت کا افتتاح ممبئی کےعالم دین مولانا سید احمد علی کے ہاتھوں عمل میں آیا۔ مقامی لوگوں نے اس موقع پر خصوصی جشن کا اہتمام کیا۔ گاؤں کے لوگ کہتے ہیں کہ اُن کی محنت رنگ لائی ہے۔ گاؤں والوں کےساتھ چند صاحب ثروت کی ملی جلی کوشش سے یہ شاندارعمارت تعمیرہوئی ۔ تقریبا65لاکھ کے تخمینہ سے باب الحوائج تعمیر ہوئی ہے ۔ پوتن ہلی گاؤں میں ایک مسجد، مدرسہ اورامام باڑہ موجود ہیں۔ مقامی لوگ کہتے ہیں کہ باب الحوائج کی پرانی عمارت خستہ ہوچکی تھی۔ لہذا گاؤں والوں نے نئی عمارت تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا اوراس طرح چند سالوں کی محنت کےبعد نئے باب الحوائج کی تعمیرعمل میں آئی ہے۔ اب یہ عمارت اس چھوٹےسے گاؤں کی زینت بن چکی ہے۔

پوتن ہلی میں باب الحوائج کا ممبئی کےعالم دین مولانا سید احمد علی کے ہاتھوں افتتاح

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز