تنظیم بزم نسواں کی جانب سے 3650 لڑکیوں میں ایک کروڑ47لاکھ روپے کی اسکالرشپ تقسیم

Aug 04, 2017 08:36 PM IST | Updated on: Aug 04, 2017 08:36 PM IST

بنگلورو : کرناٹک کی مسلم خواتین کی ایک قدیم تنظیم بزم نسواں نے ایک اور تاریخی کارنامہ انجام دیا ہے۔ اس تنظیم نے تین ہزار سے زائد مسلم لڑکیوں میں ایک کروڑ47لاکھ روپےکی اسکالرشپ تقسیم کی ہے۔

بنگلورو کے صمد ہاؤس میں بزم نسواں کا اسکالرشپ پروگرام منعقد ہوا۔ اس پروگرام میں پی یوسی، ڈگری اور پیشہ وارنہ کورسوں میں زیرتعلیم مسلم لڑکیوں نے حصہ لیا۔ بزم نسواں نے3650 لڑکیوں میں ایک کروڑ47لاکھ روپے کی اسکالرشپ تقسیم کی۔ لڑکیوں کو ان کے کورس کے مطابق اسکالرشپ کی رقم ادا کی گئی۔

تنظیم بزم نسواں کی جانب سے 3650 لڑکیوں میں ایک کروڑ47لاکھ روپے کی اسکالرشپ تقسیم

ریاست کے بنیادی وابتدائی تعلیم کے وزیر تنویرسیٹھ نےکہا کہ بزم نسواں کے تحت زکوة ، صدقات اورعطیہ جات کی رقم کا بخوبی استعمال کیا جا رہا ہے۔ تعلیمی ترقی کیلئے اس طرح کی کوششیں ہرعلاقہ میں ہونی چاہئیں۔ معروف صنعتکار ضیا اللہ شریف نے طالبات سےاپیل کی کہ وہ بلند حوصلوں کےساتھ تعلیم حاصل کریں اورکسی بھی ناکامی پرمایوس نہ ہوں۔ بزم نسواں کی صدر حسنی شریف نے کہاکہ گزشتہ 42 سال سے بزم مسلم لڑکیوں میں اسکالرشپ تقسیم کررہی ہے۔ اب تک 52 ہزار مسلم لڑکیوں میں اسکالرشپ تقسیم کی گئی ہے۔

واضح رہے کہ بزم نسواں کی مالی مدد کے ذریعہ کئی ہزار مسلم لڑکیوں نے انجینئرنگ، ایم بی بی ایس اور دیگرکورسس مکمل کیے ہیں۔ کئی طالبات اعلی عہدوں پرفائز ہوئی ہیں۔ کرناٹک بالخصوص بنگلورو کے مسلم سماج کی تعلیم ترقی میں بزم نسواں کی کوششوں کی کوئی ستائش کئے بغیرنہیں رہتا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز