ذبح کیلئے جانوروں کی فروخت پر پابندی کی مخالفت تیز ،اب آئی آئی ٹی مدراس کے طلبہ نے منعقد کی بیف پارٹی

May 29, 2017 10:24 PM IST | Updated on: May 29, 2017 10:26 PM IST

چنئی : گوشت پر پابندی کا معاملہ طول پکڑنے لگا ہے۔ کیرالہ کے بعد تمل ناڈو میں بھی مرکزی حکومت کے فیصلہ کی مخالفت میں بیف پارٹی کا انعقاد کیا گیا۔ آئی آئی ٹی مدراس میں طالب علموں نے بیف فیسٹ منعقدکیا۔ اطلاعات کے مطابق آئی آئی ٹی کیمپس میں تقریبا 50 طالب علموں نے بیف پارٹی کا اہتمام کیا ۔ تاہم یہ پارٹی کب منعقد کی گئی ، فی الحال اس کا انکشاف نہیں ہوا ہے۔ مگر بتایا جارہا ہے کہ طلبہ نے یہ پارٹی مرکزی حکومت کے فیصلہ کے خلاف کی تھی ۔

ادھر ریاست کی اہم اپوزیشن پارٹی ڈی ایم کے کے ایگزیکٹو چیئرمین ایم کے اسٹالن نے 31 مئی کو گوشت پر پابندی کی مخالفت میں چنئی میں ریلی کا اعلان کیا ہے ۔ انہوں نے کیٹل سلاٹر بند کرنے کے ریاست اور مرکزی حکومت کے فیصلے کو غیر مناسب قرار دیا ہے۔

ذبح کیلئے جانوروں کی فروخت پر پابندی کی مخالفت تیز ،اب آئی آئی ٹی مدراس کے طلبہ نے منعقد کی بیف پارٹی

خیال رہے کہ کیرالہ کے کنور میں کانگریس کی یوتھ ونگ کے کچھ کارکنوں نے جانوروں کی فروخت پر پابندی کی مخالفت میں عوامی طور پر ایک جانور کو ذبح کیا تھا ۔ مظاہرین نے اس ایونٹ کو میٹ فیسٹ کا نام دیا تھا۔اس کے بعد کانگریس کارکن اور اس کے ساتھیوں کے خلاف ہفتہ کو مقدمہ درج کیا گیا تھا۔ کانگریس نائب صدر راہل گاندھی کی جانب سے اس واقعہ کی مذمت کئے جانے کے بعد کیرالہ کانگریس نے دو کارکنوں کو معطل بھی کر دیا ہے۔

تاہم کیرالہ کے وزیر اعلی نے مرکزی حکومت کے اس فیصلہ کی شدید تنقید کی ہے۔ وزیراعلی نے کہا کہ ریاستی حکومت ریاست کے عوام کو ان کی پسند کا کھانا اور سہولیات مہیا کرائے گی۔ لوگ کیا کھائیں، کیا نہیں ، انہیں یہ دہلی اور ناگپور سے جاننے کی ضرورت نہیں ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز