رام مندر معاملہ پر اشتعال انگیز بیان دینے والے بی جے پی لیڈر کے خلاف معاملہ درج

Apr 10, 2017 12:01 PM IST | Updated on: Apr 10, 2017 12:01 PM IST

حیدرآباد۔ ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کو لے کر اشتعال انگیز بیان دینے والے بی جے پی رکن اسمبلی راجا سنگھ کے خلاف معاملہ درج کر لیا گیا ہے۔ راجا کے خلاف مذہبی جذبات کو بھڑکانے کے الزام میں یہ معاملہ درج کیا گیا ہے۔ راجا سنگھ نے کہا تھا کہ اگر کوئی رام مندر کی مخالفت کرے گا تو وہ اس کی گردن کاٹ دیں گے۔ راجا سنگھ نے حیدرآباد میں منعقد ایک پروگرام میں یہ متنازعہ بیان دیا تھا۔

حیدرآباد کی ایک مقامی مسلم تنظیم مجلس بچاو تحریک کے ترجمان امجد اللہ نے پولیس میں شکایت درج کرائی تھی جس پر نوٹس لیتے ہوئے پولیس نے ان کے خلاف معاملہ درج کر لیا۔ پولیس انسپکٹر ڈی ونکنا نائک نے پی ٹی آئی کو بتایا کہ  دبیرپورا کی پولیس نے بی جے پی لیڈر کے خلاف تعزیرات ہند کی دفعہ دو سو پنچانوے اے کے تحت معاملہ درج کیا ہے۔

رام مندر معاملہ پر اشتعال انگیز بیان دینے والے بی جے پی لیڈر کے خلاف معاملہ درج

خیال رہے کہ یہ پہلی مرتبہ نہیں ہے جب ممبر اسمبلی نے اس طرح کا بیان دیا ہے۔ وہ اس سے پہلے بھی کئی مرتبہ اپنے متنازع بیانات کی وجہ سے سرخیوں میں رہ چکے ہیں۔ اس سے قبل راجا سنگھ نے اپنے فیس بک پیج پر ایک ویڈیو کے ذریعہ اونا میں دلتوں کی پٹائی کو صحیح ٹھہرایا تھا۔

 

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز