کرناٹک : پریش میستا کی پراسرار موت کے خلاف بی جے پی کا سرسی میں پرتشدد احتجاجی مظاہرہ

Dec 13, 2017 11:18 PM IST | Updated on: Dec 13, 2017 11:18 PM IST

بنگلورو : شمالی کنڑا ضلع ہوناور کے رہنے والے پریش میستا کی پُراسرار موت کی مخالفت کرتے ہوئے ہندو نواز تنظیموں نے آج سرسی بند کی کال دی ۔ ـ بند کی حمایت کرتے ہوئے بی جے پی کارکنوں نے بھی زبردست احتجاج کیا۔ احتجاجیوں نے پولیس اہلکاروں پر پتھراؤ کیا، جس کے سبب کئی لوگ زخمی ہوگئے ۔ ـ پتھراؤ کے دوران پولیس وین کے علاوہ سرکاری بسوں کو بھی نقصان پہنچا ہے ۔ـ

احتجاجیوں نے جب سرسی کے سی پی بازار سمیت مسلم علاقوں میں فسادات برپا کرنا شروع کردیئے ـ تو کشیدہ حالات پر قابو پانے کے لئے پولیس کو لاٹھی چارج کے ساتھ ساتھ ہوائی فائرنگ بھی کرنی پڑی ۔ـ اس موقع پر پولیس نے سابق وزیروشویشور ہیگڑے سمیت کئی بی جے پی کارکنوں کو گرفتارکرلیا ۔ ـ سرسی میں پولس کا سخت بندوبست کیا گیا ہے ـ۔

کرناٹک : پریش میستا کی پراسرار موت کے خلاف بی جے پی کا سرسی میں پرتشدد احتجاجی مظاہرہ

ادھر کرناٹک کے وزیر داخلہ رام لنگا ریڈی نے اس پر کہا کہ پریش میستا نامی نوجوان کی موت کے معاملہ کو بی جےپی کی طرف سے جو سیاسی رنگ دیا جارہا ہے ، وہ سراسرغلط ہے ۔ـ بی جے پی کی طرف سے کرناٹک میں فرقہ وارانہ فسادات برپا کئے جانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ رام لنگا ریڈی نے کہا کہ ہنسور میں عید میلاد النبی اور ہنومان جینتی ایک ہی دن منایا گیا ۔ ـ محکمہ پولیس نے دونوں فرقوں کیلئے علیحدہ روٹ میپ تیار کیا تھا ، لیکن بی جے پی لیڈروں نے اس پر عمل کرنے سے انکار کردیا اور معاملہ احتجاج تک پہنچ گیا ۔

ـ پریش میستا کی موت کے معاملہ پر بھی بی جے پی اسی طرح کی سیاست کررہی ہے ـ ۔ اس کی موت کی حقیقت جاننے کے لئے فورنسک محکمہ سے رپورٹ بھی حاصل کی گئی ہے ـ اس رپورٹ میں پریش کے قتل کے متعلق کوئی تصدیق نہیں ہوپائی ہے ، اس کے باوجود بی جے پی لیڈروں نے الزام لگایا ہے کہ پریش کے جسم پر گرم تیل ڈالا گیا ہے اور مہلک ہتھیاروں سے ٹیٹو کو نکالنے کی کوشش کی گئی ۔ بی جے پی کا یہ الزام سراسر غلط ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز