بیف فروخت کرنے کیلئے کیرالہ میں بی جے پی لیڈر نے بنائی کو آپریٹو سوسائٹی

Jul 05, 2017 02:42 PM IST | Updated on: Jul 05, 2017 02:42 PM IST

تھروسور : گائے تحفظ کے نام پر بی جے پی اور آر ایس ایس کا ایک مرتبہ پھر دوہرا رویہ سامنے آیا ہے ۔ ایک طرف جہاں ملک بھر میں بیف کے نام پر ہنگامہ مچایا جارہاہے اور آئے دن وارداتیں رونما ہورہی ہیں وہیں دوسری طرف کیرالہ کے تھروسور ضلع میں بی جے پی اور راشٹریہ سویم سیوک سنگھ کے لیڈروں نے بیف فروخت کرنے کے لئے ایک کوآپریٹو سوسائٹی بنائی گئی ہے۔ بتایا جاتا ہے یہ سوسائٹی اپنی سیاسی روٹی سینکنے کیلئے بنائی گئی ہے۔

ملیالم کے ڈیلی  دیش ابھیماني میں شائع رپورٹ کے مطابق کوآپریٹو سوسائٹی کی تشکیل بی جے پی کے ضلعی صدر اے ناگیش، سکریٹری ٹی ایس الاس بابو اور بی ایم ایس ضلع سکریٹری نرسمہا سبرامنیم نے مل کر کی ہے۔ یہ سوسائٹی بیف اور مچھلی کے خرید و فروخت کا کام کرے گی۔ خبر کے مطابق اس کے لئے سوسائٹی کا ایک دفتر تھروومپڈي مندر کے پاس کھولا جاچکا ہے۔

بیف فروخت کرنے کیلئے کیرالہ میں بی جے پی لیڈر نے بنائی کو آپریٹو سوسائٹی

علامتی تصویر

کوآپریٹیو سوسائٹی جانوروں کے گوشت کو خوردہ اور تھوک طور پر فروخت کرے گي۔ اتنا ہی نہیں سوسائٹی کا گوشت سے متعلق خوراک کو سپر مارکیٹ میں سپلائی کرنے کا بھی منصوبہ ہے ۔ علاوہ ازیں سوسائٹی نے گوشت اور مچھلی کو تازہ رکھنے کیلئے کولڈ اسٹوریج کی سہولت بھی شروع کرنے کا منصوبہ بنارہی ہے۔ ساتھ ہی ساتھ یہ سوسائٹی گوشت مچھلی اور دیگر اشیا کی فروخت کیلئے ایک موبائل اسٹور بھی شروع کرے گی۔

سوسائٹی کا کہنا ہے کہ وہ جلد ہی ضلع میں ریستوران کا ایک سلسلہ شروع کیا جائے گا ۔ گوشت مینوفیکچرنگ کوآپریٹو کمیٹی کے سربراہ اے ناگیش بی جے پی اور آر ایس ایس کے انتظامی کمیٹی کے رکن ہیں۔ غور طلب ہے کہ یہ خبر ایسے وقت میں آئی ہے جب گائے کے نام ملک بھر میں ہو رہے قتل میں براہ راست طور پر بی جے پی اور آر ایس ایس سے وابستہ لوگوں کے نام سامنے آ رہے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز