حیدرآباد میں بی جے پی 17 ستمبر کو منائے گی یوم انضمام، تاریخ دانوں کا فرقہ وارانہ کشیدگی بڑھنے کا انتباہ

Sep 14, 2017 11:30 PM IST | Updated on: Sep 14, 2017 11:30 PM IST

حیدرآباد : سابقہ ریاست حیدرآباد پر پولیس ایکشن کے دن کو یوم انضمام یا یوم نجات منانے کے مطالبہ کے خلاف مہم چلانے والے اسکالرس کیپٹن پانڈو رنگا ریڈی اور ڈاکٹر چرنجیوی نے کہا کہ یہ دن دراصل یوم غم ہے ۔ دونوں کا منصوبہ ہے کہ پولیس ایکشن سے متعلق حقائق کو نوجوانوں کو مطلع کرنے کے لئے تلنگانہ بھر میں مہم چلائی جائے ۔ واضح رہے کہ ریاست حیدرآباد کو جب آزاد ہندوستان میں شامل کیا گیا تھا ، تو مقامی نواب اور ہندوستانی سپاہیوں کے درمیان زبردست جھڑپ ہوئی تھی، جس میں ریاست کے بہت سے فوجی مارے گئے تھے۔ اسی کو بی جے پی یوم انضمام کی شکل میں منانے جا رہی ہے جبکہ پرانے حیدر آبادی اس کو یوم غم کی شکل میں مناتے ہیں۔

تاریخ داں کیپٹن پا نڈو رنگا ریڈی اور ماہر تعلیم ڈاکٹر چرنجیوی حیدرآباد میں گنگا جمنی تہذیب کی علامت سمجھے جاتے ہیں۔ ان دونوں نے سابقہ ریاست حیدرآباد نظام کے دور حکومت اور حیدرآباد پر پولیس ایکشن پر کافی تحقیق کی ہے۔ دونوں اس بات سے اتفاق نہیں رکھتے کے 17 ستمبر 1948 کو سابقہ ریاست حیدرآباد کا انڈین یونین میں انضمام ہوا تھا ۔ کیپٹن پانڈو رنگا ریڈی اور ڈاکٹر چرنجیوی نے 17 ستمبر کو بی جے پی کے یوم نجات منانے کے مطالبہ کو غلط قرار دیا اور کہا کہ اس سے فرقہ وارانہ ماحوال متاثر ہو سکتا ہے ۔بی جے پی نے اس سال 17 ستمبرکو بطور یوم نجات منانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ اقتدار میں آنے کے بعد وہ تلنگانہ میں پولیس ایکشن کی یاد میں اسٹیچو آف لبرٹی قائم کرے گی ۔

حیدرآباد میں بی جے پی 17 ستمبر کو منائے گی یوم انضمام، تاریخ دانوں کا فرقہ وارانہ کشیدگی بڑھنے کا انتباہ

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز