رائچور : سیکورٹی کا بہانہ بناکر مجلس اتحاد المسلمین کے عوامی جلسہ کو انتظامیہ نے نہیں دی اجازت

Sep 10, 2017 01:29 PM IST | Updated on: Sep 10, 2017 01:29 PM IST

رائچور : کرناٹک کے رائچور میں ضلع انتظامیہ اور پولیس کی جانب سے مجلس اتحاد المسلمین کے جلسہ عام کو اجازت نہیں دی گئی ہے، جس کولے کر ایم آئی ایم کے لیڈروں اور کارکنوں میں شدید غم وغصہ دیکھا جا رہا ہے ۔واضح رہے کہ رائچور میں 19اگست کو جلسہ عام منعقد ہونے والا تھا اور گنیش تہوارکے پیش نظر پولیس نے جلسہ عام کو 9 ستمبر کو منعقد کرنے کا مشورہ دیا تھا، لیکن سکیورٹی کی وجوہات بتاکر پولیس نے اس جلسہ کیلئے بھی اجازت نہیں دی ۔

ایم آئی ایم ضلع صدر نور محمد سہروردی نے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ضلع انتظامیہ اور پولیس پر دھوکہ دہی کا الزام عائد کیا ۔ انہوں نے کہا کہ شہر میں راہل گاندھی کے جلسے کیلئے حکومت کے پاس درکار پولیس فورس ہے ، لیکن جب مجلس اتحاد المسلمین کی بات آتی ہے ، تو پولیس کو سیکورٹی کا مسئلہ درپیش ہوتا ہے ۔ نور محمد نے الزام لگایا کہ مقامی کانگریس لیڈر ایم آئی ایم کی مقبولیت سے بوکھلاہٹ کا شکار ہوگئے ہیں اور مجلس اتحاد المسلمین کے صدراسدالدین اویسی کے دورے سے خو فزدہ ہیں ۔ انہوں نے ضلع انتظامیہ اور پولیس کے رویہ کو لے کر عدالت سے رجوع ہونے کا اعلان کیا ۔

رائچور : سیکورٹی کا بہانہ بناکر مجلس اتحاد المسلمین کے عوامی جلسہ کو انتظامیہ نے نہیں دی اجازت

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز