کرنول میں ڈاکٹر عبدالحق یونیورسٹی کا قیام جلد عمل میں آجائے گا، 50 کروڑ روپے بھی منظور

کرنول میں رکن قانون ساز کونسل محمد شریف کا کہنا ہے کہ حکومت آندھرا پر دیش اردو زبان کی ترقی اور فروغ کے لئے ہمیشہ پیش پیش رہی ہے ۔

Dec 14, 2017 10:20 PM IST | Updated on: Dec 14, 2017 10:20 PM IST

کرنول : کرنول میں رکن قانون ساز کونسل محمد شریف کا کہنا ہے کہ حکومت آندھرا پر دیش اردو زبان کی ترقی اور فروغ کے لئے ہمیشہ پیش پیش رہی ہے ۔ اسی کو مدنظر رکھتے ہوئے کرنول میں ڈاکٹر عبدالحق یونیورسٹی کا قیام عمل میں لایا گیا اور 50ایکڑ اراضی یونیورسٹی کے لئے منظور کی گئی ہے۔ ساتھ ہی ساتھ یونیورسٹی کیلئے 50 کروڑ روپئے بھی منظور کئے گئے ہیں اور 18کروڑ روپئے کی رقم کا جی او بھی جاری کردیا گیا۔

انھوں نے مزید کہا کہ کڑپہ میں مولانا آزاد یونیورسٹی کا مرکز قائم کرنے کا بھی بابو نے وعدہ کیا ہے، جو عنقریب پورا کیا جائے گا۔ 2014ڈی ایس سی میں 526اساتذہ کے تقررات کے لئے اعلانیہ جاری کردیا گیا تھا۔ جو اردو کی ترقی کا ایک ضامن ہے ۔ انھوں نے یہ وعدہ کیا کہ آنے والے ڈی ایس سی میں مکمل جائیدادوں کو پر کیا جائے گا اور ریاست کے 13اضلاع میں پرائمری اسکولس کو اپ گریڈ کرکے ہائی اسکول بنایا گیا ہے۔آنے والے تعلیمی سالوں میں اقامتی اردو اسکولس بھی قائم کئے جائیں گے ۔

کرنول میں ڈاکٹر عبدالحق یونیورسٹی کا قیام جلد عمل میں آجائے گا، 50 کروڑ روپے بھی منظور

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز