سفرحج پرجانے والے ائمہ اور موذنین کے اعزاز میں بنگلورو میں تقریب کا انعقاد

Aug 29, 2017 07:36 PM IST | Updated on: Aug 29, 2017 07:36 PM IST

بنگلورو۔ گائے کی حفاظت کےنام پر اقلیتوں اور دلتوں پر ظلم ڈھانے کا سلسلہ بند ہو، بیف پرپابندی سے مسلمانوں کو نہیں کسانوں کو نقصان ہوگا۔ بنگلورومیں وزیراعلی سدرامیا نے سفرحج پرجانے والے ائمہ اور موذنین کے اعزاز میں منعقدہ تقریب میں یہ بات کہی۔بنگلورو کے  ٹاؤن ہال میں سفر حج پرجانے والے ائمہ اور موذنین کے اعزاز میں اجلاس منعقد ہوا۔ ہرسال کی طرح اس بار بھی ریاست کے سابق وزیراور چامراج پیٹ کے رکن اسمبلی ضمیراحمد خان نے اپنے صرف خاص سے35ائمہ اور موذنین کو سفرحج پرروانہ کیا۔ اس موقع پروزیراعلی سدرامیا نے ضمیراحمد خان کی اس سماجی خدمات پرخوشی کا اظہارکیا۔وزیراعلی نے گاؤ کشی پرپابندی کی آڑ میں ہو رہے مظالم پرافسوس کا اظہارکیا۔

وزیراعلی نے کہا کہ گائے کی حفاظت کے نام پرصرف اقلیتوں پر نہیں دلتوں پربھی ظلم ڈھائےجا رہےہیں۔ گائے کی حفاظت کے نام پرآج صرف اقلیتوں پر نہیں دلتوں پرحملے ہو رہے ہیں۔ یہ غلط فہمی ہے کہ بیف کومسلمانوں کی غذا سمجھاجاتا ہے۔ لیکن کئی طبقےبیف کھاتے ہیں۔ ان میں کئی ہندو بھی شامل ہیں۔ بیف پرپابندی سے صرف مسلمانوں کوتکلیف نہیں ہوگی کسانوں کوبڑا نقصان ہوگا۔

سفرحج پرجانے والے ائمہ اور موذنین کے اعزاز میں بنگلورو میں تقریب کا انعقاد

تقریب میں ضمیراحمد خان نے کہا کہ وہ گزشتہ20سال سےائمہ اورموذنین کوحج پرروانہ کر رہے ہیں۔ سیاست میں قدم رکھنے سے پہلے یہ خدمت انجام دیتے آرہے ہیں۔ ریاستی حج کمیٹی کےذریعہ منتخب ہونے والے بنگلورو اورکرناٹک کے دیگر شہروں کے ائمہ اورموذنین کو ہرسال حج کی سعادت حاصل ہورہی ہے۔ ہرسال یہ تعداد بڑھتی جارہی ہے۔ ضمیراحمد خان کی یہ انوکھی خدمت قابل رشک رہی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز