تنقید برداشت نہیں کرپانے والے لوگ اب میری جان لینا چاہتے ہیں : اداکار کمل ہاسن

Nov 05, 2017 01:58 PM IST | Updated on: Nov 05, 2017 01:58 PM IST

چنئی : معروف اداکار کمل ہاسن نے اپنے مخالفین کو کرار جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ جو تنقید کے سامنے کھڑا نہیں ہوسکتے ، اب وہ ان کی جان لینا چاہتے ہیں ۔ کمل ہاسن نے کسانوں کے ایک گروپ کو خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اگر ہم ان پر سوال اٹھاتے ہیں تو وہ ہمیں ملک مخالف قرار دیتے ہیں اور جیل بھیجنا چاہتے ہیں ۔ اب چونکہ جیلوں میں تو کوئی جگہ خالی نہیں ہے ، اس لئے وہ ہمیں گولی مار کر ختم کرنا چاہتے ہیں۔

انہوں نے یہ باتیں اکھل بھارتیہ ہندو مہا سبھا کے نائب صدر اشوک شرما کے بیان کے جواب میں کہیں ۔ شرما نے کمل ہاسن کو ہندو دہشت گردی سے متعلق مضمون لکھنے پر کہا تھا کہ ان کے جیسے لوگوں کو گولی مار دی جانی چاہئے ۔

تنقید برداشت نہیں کرپانے والے لوگ اب میری جان لینا چاہتے ہیں : اداکار کمل ہاسن

ہندوستان کے معروف اداکار کمل ہاسن

قابل ذکر ہے کہ ایک ہفتہ وار میگزین میں ہندو دہشت گردی پر مضمون لکھنے کی وجہ سے کمل ہاسن ہندو شدت پسندوں کے نشانے پر ہیں۔ انہوں نے ہندو دہشت گردی کے بارے میں کہا تھا کہ دائیں بازو نے اب اپنی طاقت کا استعمال کرنا شروع کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا تھا کہ دایاں بازو تشدد میں ملوث ہے اور ہندو کیمپوں میں دہشت گردی گھس چکی ہے۔ ہاسن نے مزید لکھا تھا کہ کوئی یہ نہیں کہہ سکتا کہ ہندو دہشت گردی کا وجود نہیں ہے۔ انہوں نے لکھا کہ ہندو شدت پسند پہلے بات چیت میں یقین رکھتے تھے ، لیکن اب وہ تشدد میں ملوث ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز