Live Results Assembly Elections 2018

عشرت جہاں کیس کے عرضی گذار گوپی ناتھ پلئی کی سڑک حادثے میں موت

Apr 13, 2018 09:11 PM IST | Updated on: Apr 13, 2018 09:11 PM IST

کوچی: عشرت جہاں انکائونٹر معاملے کے عرضی گذار میں سے ایک گوپی ناتھ پلئی کی آج سڑک حادثے میں موت ہوگئی۔ گوپی ناتھ پلئی جاوید غلام شیخ عرف پرنیش کمار پلئی کے والد تھے۔ گجرات پولس نے عشرت جہاں کے ساتھ جاوید غلام شیخ اور دیگر دو کا بھی انکائونٹر کیا تھا۔ کیرل کے رہنے والے پلئی کا بدھ کی صبح تقریباً سوا چھ بجے نیشنل ہائی وے 66پر ایکسیڈنٹ ہوگیا۔ انہیں کوچی کے ایک پرائیویٹ میڈیکل کالج میں داخل کرایا گیا تھا۔ پولس کے مطابق گوپی ناتھ پلئی اپنے بھائی مادھون پلئی کے ساتھ کار سے کہیں جارہے تھے، تبھی ایک لاری نے ان کی کار کو ٹکر مار دی۔

سب انسپکٹر بی شاجیمون نے نیوز 18کو بتایا کہ جس ماروتی کار میں پلئی بیٹھے تھے، اس کے سامنے چل رہی گاڑی نے اچانک بریک لگادیا۔ بچنے کی کوشش میں ان کی کار پھسل گئی ۔ تبھی پیچھے سے آرہے ایک تیز رفتار ٹرک نے ان کی کار کو ٹکر مارد ی، انہیں کافی چوٹیں آئیں تھیں۔

عشرت جہاں کیس کے عرضی گذار گوپی ناتھ پلئی کی سڑک حادثے میں موت

اس حادثہ میں مادھون پلئی محفوظ ہیں، وہیں گوپی ناتھ پلئی کی علاج کے دوران کوچی کے اسپتال میں موت ہوگئی ۔ گوپی ناتھ پلئی کے بیٹے پرنیش کمار کو پنے میں اپنے پڑوس میں رہنے والی ساجدہ عرف عشرت جہاں سے پیار ہوگیا۔ ساجدہ سے شادی کے لئے پرنیش نے اپنا مذہب تبدیل کردیا، وہ جاوید غلام شیخ ہوگئے۔ 15جون 2004کو عشرت جہاں، جاوید غلام شیخ، امجد علی رانا اور ذیشان جوہر کو گجرات پولس نے انکائونٹر میں مار دیا۔ گجرات پولس نے دعویٰ کیا کہ چاروں لشکر طیبہ کے لئے کام کرتے تھے اور گجرات کے اس وقت کے وزیراعلیٰ نریندر مودی کو مارنے کا منصوبہ بنارہے تھے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز