خلائی میدان میں ہندوستان کا دبدبہ، 104 سیٹلائٹ ایک ساتھ لانچ کر اسرو نے رقم کی تاریخ

Feb 15, 2017 09:45 AM IST | Updated on: Feb 15, 2017 11:58 AM IST

نیلور۔ ہندوستان نے خلائی میدان میں ایک اور اہم کامیابی حاصل کی اور ہندوستانی خلائی تحقیقی تنظیم (اِسرو) نے ایک اورسنگ میل عبور کیا ہے کیونکہ اس کے پی ایس ایل وی سی 37راکٹ کومدار میں چھوڑا گیا ۔ اس کی الٹی گنتی کل صبح5بجکر28منٹ پرشروع ہوئی تھی جو 16گھنٹے تک جاری رہی۔اس طرح اسرو نے آج واحد مشن میں دُنیا کے سب سے زیادہ 104 سیٹلائیٹس کو چھوڑنے کا ریکارڈ بنایا ہے۔ دنیا میں پہلی مرتبہ اتنے زیادہ سٹلائیٹس کو چھوڑنے کا تجریہ کرنے کا اعزاز اسرو کو حاصل ہوا ہے۔

104 سیٹلائیٹس اِسرو کی لانچ وہیکل پی ایس ایل وی سی۔37 میں رکھ کر مدار میں رکھ کرآج صبح 9 بج کر 28 منٹ پر آندھرا پردیش کے ضلع نیلور میں واقع سری ہری کوٹہ کے ستیش دھون خلائی مرکز سے چھوڑے گئے۔

خلائی میدان میں ہندوستان کا دبدبہ، 104 سیٹلائٹ ایک ساتھ لانچ کر اسرو نے رقم کی تاریخ

پی ایس ایل وی میں ہندوستان کے کارٹو سیٹ 2 سیریز والی سیٹلائیٹ بھی شامل ہے جن کا وزن 714 کیلو گرام ہے۔ زمین کے تجزیہ کے لئے اسے چھوڑا گیا ہے جہاں سے یہ زمین کی معیاری ہائی ریزولوشین تصاویر بھیجے گا۔ اس میں 104 سیٹلائیٹس بھی ہیں جن کا وزن 664 کیلو گرام ہے۔ انھیں مدار میں چھوڑا گیا ہے۔ کارٹو سیٹ 2 سیریز کے سیٹلائیٹس کے علاوہ دیگر 2 نانو سیٹلائیٹس جن کا تعلق ہندوستان سے ہے، کے ساتھ ساتھ بیرونی ممالک کے 101 نانو سیٹلائیٹس کو بھی چھوڑا گیا۔ ان میں امریکہ کے 96، اسرائیل، قزاقستان، نیدرلینڈ، سوئزرلینڈ اور متحدہ عرب امارات کا ایک ایک سیٹلائیٹ شامل ہے۔

pslv37

خلائی ایجنسی نے قبل ازیں جنوری کے اواخر میں 83سٹلائیٹس کو چھوڑنے کا منصوبہ تیار کیا تھا اور بیرونی ممالک کی80سٹلائیٹس کو چھوڑاجانے والاتھا۔ تاہم اس میں مزید 20کا اضافہ کرنے سے اس میں تاخیر ہوئی۔اس سٹلائیٹس کو مدار میں چھوڑنا خلائی تاریخ کی ایک اہم کامیابی ہے۔دوسری طرف وزیراعظم کے جنوبی ایشیا کے سٹلائیٹ پروجیکٹ کو مارچ میں چھوڑاجائے گا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز