اسرو کے سابق صدرنشین پروفیسر یو آر راو بنگلورو میں چل بسے

بنگلورو۔ ہندوستانی خلائی تحقیقی تنظیم (اسرو) کے سابق صدرنشین پروفیسر یو آر راو بنگلورو میں واقع اپنی قیام گاہ میں چل بسے ۔

Jul 24, 2017 12:20 PM IST | Updated on: Jul 24, 2017 12:20 PM IST

بنگلورو۔ ہندوستانی خلائی تحقیقی تنظیم (اسرو) کے سابق صدرنشین پروفیسر یو آر راو بنگلورو میں واقع اپنی قیام گاہ میں چل بسے ۔ان کی عمر85تھی۔ان کے پسماندگان میں بیوی کے علاوہ ایک بیٹا اور ایک بیٹی شامل ہیں۔ ذرائع نے بتایا کہ وہ صحت کے مسائل کے سبب گزشتہ کچھ عرصہ سے علیل تھے۔ پروفیسر راو نے ہندوستان کے پہلے سٹلائیٹ آریہ بھٹ کے دنوں سے لے کر کئی سٹلائیٹ پروگراموں کو تیار کرنے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔ پروفیسر راو 1984سے 1994تک دس سال تک اسرو کے صدرنشین رہے ۔ چندریان ایک اور منگل یان کی تیاری میں ان کا اہم کردار رہا ہے۔

مدراس یونیورسٹی کے سابق طالب علم پروفیسر راو نے آخری سانس تک تروننتاپورم کے انڈین انسٹی ٹیوٹ فار اسپیس سائنس اینڈ ٹکنالوجی کے چانسلر کے طور پرخدمات انجام دیں ۔انہوں نے کئی سرکردہ سائنٹفک تحقیقی اداروں اور یونیورسٹیز میں اکیڈیمک کونسل کے رکن کے طور پربھی خدمات انجام دیں ۔ پروفیسر راو کو گزشتہ سال پدم وبھوشن اعزاز سے نوازا گیا تھا۔ ان کے انتقال پر وزیراعظم نریندر مودی نے گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے ۔ انہوں نے اپنے ٹوئیٹر پیغام میں کہا کہ پروفیسر راو کی ہندوستانی خلائی پروگرام میں خدمات ناقابل فراموش ہیں۔2013میں وہ پہلے ہندوستانی خلائی سائنس دان تھے جنہیں واشنگٹن ڈی سی کے ہال آف فیم میں جگہ دی گئی تھی ۔

اسرو کے سابق صدرنشین پروفیسر یو آر راو بنگلورو میں چل بسے

پروفیسر راو 1984سے 1994تک دس سال تک اسرو کے صدرنشین رہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز