خاتون کی امامت کا معاملہ:جمیدہ نے کہا،نماز پانچ وقت کی نہیں تین وقت کی ہوتی ہے

کیرالہ میں مردوں میں نماز پڑھانے کے بعد سرکھیوں میں آئی جمیدہ نے ایک بار پھر سنسنی پھیلا دی ہے۔یہ سنسنی خیزبیان جمیدہ نے نیوز18ہندی سے فون پرخاص بات میں دیا۔جمیدہ نے کہاہے کہ نماز پانچ وقت کی نہیں تین وقت کی ہوتی ہے۔جمیدہ کے مطابق نماز صبح،شام اور رات کے وقت ادا کی جاتی ہے۔

Jan 31, 2018 12:31 PM IST | Updated on: Jan 31, 2018 02:39 PM IST

ملاپورم۔کیرالہ میں مردوں کو نماز پڑھانے کے بعد سرخیوں میں آئی جمیدہ نے ایک بار پھراپنا بیان دیکر سنسنی پھیلا دی ہے۔یہ سنسنی خیزبیان جمیدہ نے نیوز18ہندی سے فون پرخاص بات چیت میں دیا۔جمیدہ نے کہاہے کہ نماز پانچ وقت کی نہیں تین وقت کی ہوتی ہے۔جمیدہ کے مطابق نماز صبح،شام اور رات کے وقت ادا کی جاتی ہے۔

وہیں دوسری جانب جمیدہ نے نماز ادا کرنے کے طریقے پر بھی سوال اٹھایاہے۔جمیدہ کا کہنا ہیکہ ایک بار ایک رکعات میں صرف ایک مرتبہ ہی سجدہ ہوتا ہے۔لیکن دن میں تین نماز اور ایک سجدے کا ذکر قرآن میں کہاں کیا گیا ہے۔اس بارے میں جمیدہ کوئی جواب نہیں دے سکیں۔

 خاتون کی امامت کا معاملہ:جمیدہ نے کہا،نماز پانچ وقت کی نہیں تین وقت کی ہوتی ہے

خاتون امام جمیدہ:کیرالہ

Loading...

جمیدہ کا کہنا ہے کہ ہم صرف قرآن کو مانتے ہیں۔حدیث میں لکھی باتوں کو ماننے سے جمیدہ نے صاف انکار کر دیا۔ایک خاتون امام بن کر مردوں کو نماز پڑھا سکتی ہے اس بارے میں جمیدہ کا کہنا ہیکہ ایسا کرکے وہ جنسی تبعیض کو مٹانا چاہتی ہیں اور خواتین کو مردوں کے برابر درجہ دلانا چاہتی ہیں۔ان کا کہنا ہیکہ وہ قرآن و سنت  کی سو سائٹی سے وابستہ ہیںاور سو سائٹی ترقی پسند سوچ رکھتی ہیں۔

لیکن مرد خواتین کے پیچھے نماز پڑھ سکتے ہیں اس بارے میں بھی جمیدہ کوئی دستاویز پیش کرنے سے بھی انکار کرتی ہیں۔جمیدہ کا کہنا ہیکہ خواتین کے حقوق کیلئے وہ آگے بھی اسی طرح سے مردوں کو نماز پڑھاکر امامت کرتی رہیں گی۔پی کے محمد ابوالحسن چیکنور مولوی نے سنت سوسائٹی بنائی تھی۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز