گلبرگہ میں جشن بہمنی میں بہمنی سلاطین کے کارناموں پر مورخین نے ڈالی روشنی

Aug 09, 2017 02:38 PM IST | Updated on: Aug 09, 2017 02:38 PM IST

گلبرگہ۔ جنوبی ہند کی پہلی مسلم حکومت بہمنی سلطنت کی یاد میں گلبرگہ میں جشن بہمنی کا اہتمام کیا گیا ۔بہمنی فاؤنڈیشن کے زیرتقریب میں بہمنی سلاطین کے طرز حکومت پر روشنی ڈالی  گئی۔ ساتھ ہی حکومت وقت سے بہمنی قلعے کے تحفظ کے لئے اقدامات کرنے کی بھی اپیل کی گئی۔ اس موقع پر شہر گلبرگہ کی مختلف شعبہ حیات سے تعلق رکھنے والی شخصیات کو گلبرگہ کے انمول رتن ایوارڈ سے  بھی سرفراز کیا گیا۔

 تاریخ دانوں کا کہنا ہے کہ بہمنی سلاطین نے طرزحکومت کے ایسے انمٹ نقوش چھوڑے ہیں کہ انکے بعد کی حکومتوں نے بھی اسے اپنایا۔ گلبرگہ میں جشن بہمنی کے عنوان سے منعقد تقریب میں مورخین نے بہمنی سلاطین کے طرزحکومت، معاشرت، تجارت، فنون لطیفہ، مالگزاری سسٹم پر روشنی ڈالی ۔ بہمنی سلاطین  کی تعمیر کردہ تاریخی عمارتوں کی خستہ حالی پر بھی اس اجلاس میں روشنی ڈالی گئی۔ حکومت سے اس جانب توجہ دینے کا مطالبہ کیا گیا۔  اس موقع پر ای ٹی وی کے گلبرگہ نمائندے جواد میر کو بھی گلبرگہ کے انمول رتن ایوارڈ سے سرفراز کیا گیا ۔  جنوبی ہند کے ایک بڑے رقبے پر 18 بہمنی سلاطین نے 1347 سے1527 تک یعنی 180 برس تک حکومت کی ۔ تقریباً 75  برس تک بہمنی سلاطین کا دارالحکومت گلبرگہ رہا اور بیدر منتقل ہوا۔ علا الدین حسن گنگو بہمن شاہ نے اس کی بنیاد رکھی تھی ۔

گلبرگہ میں جشن بہمنی میں بہمنی سلاطین کے کارناموں پر مورخین نے ڈالی روشنی

ری کمنڈیڈ اسٹوریز