ٹیپو سلطان جینتی پر روک لگانے سے ہائی کورٹ کا انکار، سیکورٹی کے سخت انتظامات

بنگلورو / بیدر۔ کرناٹک ہائی کورٹ نے اہم فیصلہ سناتے ہوئے مجاہد آزادی حضرت ٹیپو سلطان کی جینتی پر روک لگانے سے انکار کر دیا ہے۔

Nov 08, 2017 01:05 PM IST | Updated on: Nov 08, 2017 01:05 PM IST

بنگلورو / بیدر۔  کرناٹک ہائی کورٹ نے اہم فیصلہ سناتے ہوئے مجاہد آزادی حضرت ٹیپو سلطان کی جینتی پر روک لگانے سے انکار کر دیا ہے۔ ہائی کورٹ کی دو رکنی بینچ نے سرکاری سطح پرمنائی جا رہی ہے ٹیپوجینتی پر روک لگانے سے انکارکیا ہے۔ کورگ ضلع کے درخواست گذار کے پی منجوناتھ کی عرضداشت پر سماعت کرتے ہوئے عدالت نےکہا کہ وہ اس معاملے میں مداخلت نہیں کریگی۔ عدالت کے اس فیصلہ کے بعد 10نومبر کوکرناٹک بھر میں سرکاری سطح پرمنائی جانے والی ٹیپوجینتی کے لئے راہ ہموار ہوئی ہے۔

  ٹیپوسلطان کے یوم پیدائش منانے کے سلسلے میں کرناٹک ہائی کورٹ کے فیصلہ کا دانشوروں اور قلم کاروں نے خیرمقدم کیا ہے۔ بنگلورو میں ای ٹی وی سے بات کرتے ہوئے دانشوروں نے کہا کہ صدرجمہوریہ رام ناتھ کووند، سابق صدرجمہوریہ مرحوم ڈاکٹراے پی جےعبدالکلام نے حضرت ٹیپوسلطان کے کارناموں کوسراہا ہے۔ لیکن بی جے پی اور سنگھ پریوارصرف مسلمان ہونے کی وجہ سے ٹیپوسلطان کی مخالفت کررہا ہے۔

ٹیپو سلطان جینتی پر روک لگانے سے ہائی کورٹ کا انکار، سیکورٹی کے سخت انتظامات

ادھر ریاستی حکومت کی جانب سےایک حکم نامہ جاری کیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ سرکاری دفاتر میں جو ٹیپو جینتی منائی جاتی ہے تمام لوگ اسی میں شرکت کریں ٹیپو کے چاہنے والوں کو نا ہی جلوس کی اجازت ہے اور نا ہی جلسہ کی ایسے میں ٹیپو جینتی منانا کیا معنیٰ ہوتا ہے ۔ حکومت کے اس فیصلہ کے خلاف بہوجن سماج پارٹی کے بیدرضلع صدر انکوش گوکھلے نے کہا کہ انکی پارٹی ڈپٹی کمشنر دفتر بیدر کے علاوہ تعلقہ جات کی تحصیل آفس کے روبرو احتجاج منظم کرے گی اور ٹیپو جینتی کے موقع پر جلوس اور جلسہ منعقد کرنے کی اجازت دینے مطالبہ کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس سرکار بی جے پی کے آگے جھکتی نظر آ رہی ہے۔

Loading...

ٹیپو جینتی کے موقع پر کوئی ناخوشگوارواقعات درپیش نہ ہونے کے لئے محکمہ پولس کی طرف سے مناسب اقدامات کئے جا رہے ہیں ـ ٹیپو جینتی کے موقع پر کوئی ناخوشگوارواقعات درپیش نہ ہونے کے لئے محکمہ پولس کی طرف سے مناسب اقدامات کئے جا رہے ہیں ـ

وہیں ٹیپو جینتی کے موقع پر کوئی ناخوشگوارواقعات درپیش نہ ہونے کے لئے محکمہ پولس کی طرف سے مناسب اقدامات کئے جا رہے ہیں ـ چتردگہ ضلع میں بھی آج سے 3 دنوں تک دفعہ 144 نافذ کردیا گیا ہے ـ آج سے 10 نومبر تک سخت سیکورٹی انتظامات کئے گئے ہیں ـ ضلع میں اے سی پی سمیت پولس اہلکاروں کو تعینات کیا گیا ہے ـ بتایا جارہا ہے کہ گزشتہ سال ٹیپوجینتی کی مخالفت کرتے ہوئے چتردرگہ میں ٹیپو مخالف تحریک چلائی گئی تھی ـ اس بار اس طرح کی تحریکوں پر روک لگائے کےلئے محکمہ پولس  نے یہ اہم قدم اٹھایا ہے ـ اس کے علاوہ پولس نے سنگھ  پریوار کے چند کارکنوں کو بھی گرفتار کرلیا ہے۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز