کشمیر کی طرح کرناٹک کو بھی چاہئے الگ پرچم ، ڈیزائن کیلئے سدا رمیا حکومت نے تشکیل دی 9 رکنی کمیٹی

Jul 18, 2017 04:56 PM IST | Updated on: Jul 18, 2017 04:56 PM IST

بنگلور و : کیا ریاستوں کے اپنے الگ جھنڈے ہو سکتے ہیں؟ فی الحال جموں و کشمیر کے علاوہ ہندوستان کی کسی اور ریاست کے پاس اپنا الگ پرچم نہیں ہے۔ تاہم اب کرناٹک میں الگ جھنڈے کا مطالبہ تیز ہوگیا ہے ،جس کے بعد کرناٹک کی سدا رمیا حکومت نے جھنڈا کا ڈیزائن تیار کرنے کے لئے 9 رکنی ایک کمیٹی قائم کی ہے۔

ادھر ماہرین کا کہنا ہے کہ ریاستوں کا اپنا الگ پرچم ہونا غیر آئینی نہیں ہے، لیکن وہ پرچم ہمیشہ ترنگے کے نیچے ہونا چاہئے۔ کیرالہ سے کانگریس کے ممبر پارلیمنٹ ششی تھرور کا کہنا ہے کہ ایک ریاست کا اپنا الگ پرچم ہو سکتا ہے بشرطیکہ قومی پرچم کی بالادستی کی خلاف ورزی نہ ہو۔ کرناٹک کے آئی ٹی منسٹر پريانك کھڑگے نے بھی ٹویٹ کیا کہ آئینی دائرے کے اندر اپنی الگ پہچان بنانے میں کچھ بھی غلط نہیں ہے۔

کشمیر کی طرح کرناٹک کو بھی چاہئے الگ پرچم ، ڈیزائن کیلئے سدا رمیا حکومت نے تشکیل دی 9 رکنی کمیٹی

قابل ذکر ہے کہ کرناٹک میں ایک لال اور پیلے رنگ کا پرچم ہے ، جسے غیر سرکاری طور پر اسٹیٹ فاؤنڈیشن ڈے اور دیگر تقریبات میں کنڑا گروپوں کی طرف سے استعمال کیا جاتا ہے۔

تاہم بی جے پی نے اس کی مخالفت کی ہے اور اس کو ملک مخالف قرار دیا ہے۔ مرکزی وزیر بنڈارو دتاتریہ نے کہا کہ بی جے پی کا موقف اس بات کو لے بالکل صاف ہے کہ قومی جذبات کو سیاسی عزائم سے ہمیشہ اوپر رکھا جائے گا۔ کرناٹک سے بی جے پی کے ممبر پارلیمنٹ شوبھا کرن نے کہا کہ کرناٹک حکومت کا یہ قدم قومی اتحاد کے لئے مناسب نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہماری پارٹی نے ہمیشہ ایک قوم ایک پرچم کے لئے جنگ لڑی ہے، الگ جھنڈے کا مطالبہ کرنا مکمل طور پر غلط ہے، کشمیر کا بھی الگ پرچم نہیں ہونا چاہئے، جو سدا رمیا کر رہے ہیں وہ ملک کے خلاف ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز