کرناٹک انتخابات:کانگریس کی پہلی فہرست میں سدارمیا کا دبدبہ،داغیوں کو بھی دیا موقع

Apr 16, 2018 10:05 AM IST | Updated on: Apr 16, 2018 02:50 PM IST

کرناٹک کی 225 رکن اسمبلی کیئلے مئی میں ہونے والے انتخابات کیلئے کانگریس نے اپنی پہلی فیرست جاری کر دی ہے۔کانگریس نے پہلی مرتبہ ایک ساتھ 219 امیدواروں کا اعلان کیا ہے۔اس میں وزیر اعلی سدارمیا کو چامنڈٰشوری سے ،تو وہیں سدارمیا کے بیٹے ڈاکٹر یتیندر کو ورونا اسمبلی سیٹ سے ٹکٹ دیا گیا ہے۔پانچ سیٹوں کو لیکر کانگریس نے فی الحال کوئی فیصلہ نہیں کیا ہے۔

اس فہرست پر سی ایم سدا رمیا کا دباؤ صاف نظر آ رہا ہے ۔ان کے سبھی حامیوں کے نام اس میں شامل ہیں۔

کرناٹک انتخابات:کانگریس کی پہلی فہرست میں سدارمیا کا دبدبہ،داغیوں کو بھی دیا موقع

سدا رمیا

سی ایم سدا رمیا ایک سیٹ سے ہی چناؤ لڑیں گے۔اس سے پہلے قیاس آرائیاں کی جا رہی تھیں کہ سدا رمیا دو سیٹوں پر کھڑےہوں گے۔کہا جا رہا تھا کہ سدارمیا شمالی کرناٹک میں ایک "بیک اپ"سیٹ رکھنے والے ہیں۔دراصل سدارمیا کو کچھ لوگوں نے آگاہ کیا تھا کہ بی جے پی اور جے ڈی ایس کے درمیان ڈیل کے چلتے چامنڈیشوری میں ان پر ہار کا خطرہ ہے۔ذرائع کے مطابق کانگریس صدر راہل گاندھی نے سی ایم سدا رمیان کو نیگیٹو پبلیسٹی سے بچنے کیلئے صرف ایک سیٹ سے انتخاب لڑنے کو کہا۔

ادھر ریاست کی کانگریس سربراہ پرمیشور بھی ایک سیٹ سے ہی انتخاب لڑیں گے۔پرمیشور دو سیٹوں پر کھڑا ہونا چاہتے تھے لیکن کانگریس صدر راہل گاندھی نے ان کی مانگ کو ٹھکرا دیا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز