غیرقانونی ٹیلی فون ایکسچینج کیس میں سابق مرکزی وزیر دیاندھی مارن اور ان کے بھائی کلاندھی مارن بری

Mar 14, 2018 06:39 PM IST | Updated on: Mar 14, 2018 06:41 PM IST

چنئی : سابق مرکزی وزیر ٹیلی کام دیاندہی مارن اور ان کے بھائی کلاندہی مارن کو آج اس وقت بڑی راحت نصیب ہوئی جب سی بی آئی کی خصوصی عدالت نے ا نہیں غیرقانونی ٹیلی فون ایکسچینج مقدمہ میں یہ کہتے ہوئے بری کردیا کہ بادی النظر میں ان کے خلاف کوئی مقدمہ نہیں بنتا۔ ٹیلی فون ایکسچینج مقدمہ سے خارج کرنے مارن بھائیوں کی عرضی کوقبول کرتے ہوئے 14ویں ایڈیشنل جج برائے سی بی آئی ایس نٹراجن نے کہاکہ بادی النظرمیں ملزمین کے خلاف کوئی مقدمہ نہیں بنتا اس لیے انہیں اس مقدمہ سے خارج کیاجاتا ہے۔

اس مقدمہ میں دونوں بھا ئیوں دیاندہی مارن ‘ کلاندھی مارن کے علاوہ اس وقت کے وزیر ٹیلی کام کے شخصی سکریٹری وی گوتھامان ‘ بی ایس این ایل کے سابق چیف جنرل منیجر کے برہاماناتھ ‘ سابق ڈپٹی جنرل منیجرایم ویلوسوامی ‘ سن ٹی وی نیٹ ورک کے چیف ٹکنیکل افسرایس کانن او ر الکٹریشن کے ایس روی شامل تھے ۔یہ کہتے ہوئے کہ بادی نظرمیں ان ملزمین کے خلاف کوئی شواہدثابت نہیں ہوئے ہیں اس لیے انہیں اس مقدمہ سے بری کیا جاتاہے۔

غیرقانونی ٹیلی فون ایکسچینج کیس میں سابق مرکزی وزیر دیاندھی مارن اور ان کے بھائی کلاندھی مارن بری

سابق مرکزی وزیر دیاندھی مارن ۔ فائل فوٹو

جج نے کہاکہ اس معاملہ میں ان ملزمین نے کوئی دانستہ کوئی ناجائز عمل ثابت نہیں ہوتا۔ مباحث کے دوران دیاندہی مارن کے وکیل نے کہاکہ ان کے خلاف دائر کیاگیامقدمہ سیاسی مقاصد پر مبنی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز