مختلف فرقوں ،جماعتوں اور مسالک میں منقسم ہونامسلمانوں کی پسماندگی کی اہم وجہ : مولانا توقیر رضا خان

Jan 02, 2017 11:01 PM IST | Updated on: Jan 02, 2017 11:01 PM IST

یادگری (کرناٹک ) : دور حاضر میں مسلمانوں کی پسماندگی کی اہم وجہ ایک دوسرے سے نااتفاقی ،احساس برتری، مختلف فرقوں، گروپوں اور مسالک میں بٹ جانا ہے ۔بعض فرقہ پرست جماعتیں اور تنظیمیں اس سے فائدہ اٹھارہی ہیں ۔ کرناٹک کے یادگیر میں منعقدہ ایک پروگرام میں علما نے اس کا اظہاراپنے خطاب کے دوران کیا ۔

اس موقع پر مولانا توقیر رضا خان نے کہا کہ پیغمبر اسلام نے جہالت کو ختم کرکے انسانیت کا درس دیا اور آج اسی نبی کی امت مختلف فرقوں اور مسالک میں تقسیم ہوئی ہے ، جس سے مسلمان روز بروزپسماندگی کے دلدل میں پھنستے جارہے ہیں ۔ دیگر علمااور دانشوروں نے بھی خطاب کے دوران کہا کہ اگر مسلمان مسالک اور عقائد سے بالاتر ہوکر متحد ہوجائیں ، تو پوری دنیامیں اپنا لوہا منواسکتے ہیں ۔

مختلف فرقوں ،جماعتوں اور مسالک میں منقسم ہونامسلمانوں کی پسماندگی کی اہم وجہ  : مولانا توقیر رضا خان

کرناٹک کے یادگیر شہر میں رابطہ ملت کمیٹی کی جانب سے اس اتحاد ملت کانفرنس کا انعقاد کیاگیا تھا ۔اس موقع پر صدر آل انڈیا اتحاد ملت کونسل مولانا توقیر رضا خان بریلوی کے علاوہ بنگلور کے عالم دین مولانا مقصود عمران رشادی ، بیدر کے عالم دین مولانا مجیب الرحمان قاسمی اور جماعت اسلامی ہند کرناٹک کے سکریٹری لعل حسن الکل نے بھی مہمان مقررین کی حیثیت سے شرکت کی۔

صدر رابطہ ملت کمیٹی ضلع یادگیر ایڈوکیٹ قاضی محمد امتیاز الدین صدیقی نے صدارت جبکہ یادگیر کے معروف شاعر اظہرالدین خادم نے نظامت کے فرائض انجام دئے ۔ اتحاد ملت کانفرنس میں یادگیر شہر اور ضلع کے علاوہ پڑوسی اضلاع کے مسلمانوں نے بھی کثیر تعداد میں شرکت کی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز