تحریک سے خوفزہ مودی حکومت نے روہت ویمولا، کشمیر اور جے این یو پر بنی فلموں کی اسکریننگ پر لگائی روک

Jun 11, 2017 08:38 PM IST | Updated on: Jun 11, 2017 08:38 PM IST

کیرالہ : روہت ویمولا خودکشی، کشمیر میں کشیدگی اور جے این یو تنازعہ پر بنی تین فلموں کی اسکریننگ پر مرکزی حکومت نے روک لگا دی ہے۔ ان فلموں کو کیرالہ میں منعقد ہونے والے بین الاقوامی ڈاکومنٹری اینڈ شارٹ فلم فیسٹیول میں دکھایا جانا تھا۔ لیکن ان پر مرکزی اطلاعات و نشریات کی وزارت کی جانب سے روک لگا دی گئی ہے۔

جن فلموں پر فی الحال روک لگائی گئی ہے ان  میں روہت ویمولا کی خودکشی پر 'دی انبيریبل بینگ آف لائٹنس، کشمیر میں کشیدگی پر ان دی شیڈس کو فالن چنار  اور جے این یو تنازعہ پر 'مارچ مارچ مارچ کا نام شامل ہے۔ ان تینوں فلموں کو سینسر سے چھوٹ نہیں ملی ہے۔

تحریک سے خوفزہ مودی حکومت نے روہت ویمولا، کشمیر اور جے این یو پر بنی فلموں کی اسکریننگ پر لگائی روک

سیاست ہندی ڈاٹ کام کی خبر کے مطابق  اس بات کی اطلاع کیرالہ اسٹیٹ ویڈیوز اکیڈمی کے چیئرمین نے دی ہے ۔ چیئرمین کے مطابق انہوں نے تقریبا 200 فلموں کو سرٹیفکیٹ کے لئے وزارت کے پاس بھیجا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمام فلموں کو سینسر سے چھوٹ ملی ہے ،سوائے ان تین فلموں کے۔ تاہم وزارت نے انہیں چھوٹ نہیں دینے کے لئے کوئی وجہ بھی نہیں بتائی ہے۔ مجھے لگتا ہے کہ ان تین فلموں کو دکھانے کی اجازت اس لیے نہیں دی گئی ہے کیونکہ یہ ملک میں عدم روادی کے مسئلہ کو اٹھاتی ہے۔

غور طلب ہے کہ یہ فلم فیسٹیول اگلے 16 جون کو شروع ہو رہا ہے۔ اس کا انعقاد کیرالہ اسٹیٹ ویڈیوز اکیڈمی کر رہی ہے جو کہ ریاستی حکومت کے ثقافتی شعبہ سے وابستہ ہے۔

 

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز