جانیں ٹیم انڈیا کے لئے منتخب آٹو ڈرائیور کے بیٹے محمد سراج کی کیا ہے خواہش

گزشتہ سال رانچی میں بہتر مظاہرہ کرتے ہوئے سراج نے 41وکٹس حاصل کئے تھے اور وہ ملک میں تیسرے سب سے زیادہ وکٹ لینے والے کھلاڑی کے طور پر ابھرے تھے۔

Oct 24, 2017 01:59 PM IST | Updated on: Oct 24, 2017 01:59 PM IST

حیدرآباد۔ ایم ایس کے پرساد کی زیرقیادت قومی سلیکشن کمیٹی نے حیدرآبادی نوجوان فاسٹ بالر محمد سراج کو نیوزی لینڈ کے خلاف ٹی 20کی سیریز میں شامل کیا ہے۔ یہ 23سالہ حیدرآبادی کھلاڑی کی سخت محنت کا انعام سمجھاجارہا ہے ۔ گزشتہ سال رانچی میں بہتر مظاہرہ کرتے ہوئے سراج نے 41وکٹس حاصل کئے تھے اور وہ ملک میں تیسرے سب سے زیادہ وکٹ لینے والے کھلاڑی کے طور پر ابھرے تھے۔ اس ابھرتے ہوئے فاسٹ بالر کو اس وقت موقع ملا جب ان کو سن رائزرس حیدرآباد نے 2.6کروڑروپئے میں آئی پی ایل میں بولی کے ذریعہ حاصل کیا اور سراج دیکھتے ہی دیکھتے راتوں رات ہیرو بن گئے۔

انہوں نے آئی پی ایل میں اپنے مظاہرہ سے مایوس نہیں کیا ۔ان کی ستائش آسڑیلین اوپنر و ایس ایچ کے کپتان ڈیوڈ وارنر اور ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے سابق کھلاڑی وی وی ایس لکشمن نے کی۔ انہوں نے اہم میچوں میں فاسٹ بالنگ کی ۔ وارنر نے ان کے بارے میں کہا کہ سراج ایک معیاری بولر ہیں چاہے ان کو نئی گیند دی جائے یا پھر پرانی گیند ۔ لکشمن نے ان کی ستائش کرتے ہوئے کہا تھا کہ سراج نے بہتر مظاہرہ کیا ہے اور ان کا گھریلو کرکٹ میں بھی مظاہرہ کافی بہتر رہا ہے۔ وہ سیکھ رہے ہیں ۔ ان کے مظاہروں کو دیکھتے ہوئے سلکٹروں نے ان کو انڈیا اے ٹیم کے لئے منتخب کیا اور جنوبی افریقہ کے لئے دورہ پر ان کو لے جایا گیا ۔سراج کی لائن اینڈ لینتھ کافی متاثر کن رہی ہے۔

جانیں ٹیم انڈیا کے لئے منتخب آٹو ڈرائیور کے بیٹے محمد سراج کی کیا ہے خواہش

سراج کو ہندوستانی بولنگ کوچ بھرت ارجن سے کافی فائدہ ہوا جنہوں نے سراج کو تکنیک سکھائی ۔

حال ہی میں سراج نے نیوزی لینڈ اے کے خلاف ہوم سیریز میں انڈیا اے کے لئے کھیلا ہے۔ سراج کے والد آٹوڈرائیور ہیں۔ ۔سراج کو ہندوستانی بولنگ کوچ بھرت ارجن سے کافی فائدہ ہوا جنہوں نے سراج کو تکنیک سکھائی ۔ بھرت نے حیدرآبادی ٹیم کی کوچنگ کی تھی ۔ سراج کا کہنا ہے کہ ارجن بھرت نے ان کی کافی مدد کی ہے۔بھرت ارجن کا کہنا ہے کہ سراج گیند کو سوئنگ کروانا بہتر طورپر جانتے ہیں۔وہ بہتر بونسر بھی ہیں اور 140کی رفتار سے گیند بازی کرسکتے ہیں۔ سراج جلد سیکھنے والوں میں سے ہیں۔

سراج کا کہنا ہے کہ ان کا خواب ہے کہ وہ اپنے کنبہ کے لئے حیدر آباد کے پاش علاقہ میں ایک گھر خرید کر دے دیں۔ وہ کہتے ہیں کہ اب میں تیئس سال کا ہو گیا ہوں اور اب میں اپنے کنبہ کی ذمہ داری کو بحسن وخوبی ادا کر سکتا ہوں۔ ٹیم انڈیا میں اپنے انتخاب کو لے کر انہوں نے کہا کہ مجھے امید تھی کہ ایک دن میں ضرور قومی ٹیم میں شامل کیا جاوں گا لیکن اس قدر جلدی میں مجھے شامل کیا جائے گا مجھے اس کی امید نہیں تھی۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز