مویشی مارکٹوں کو باقاعدہ بنانے کیلئے کھلے عام مارکٹ میں جانوروں کی فروخت پر امتناع عائد کیا گیا : نقوی

Jun 01, 2017 06:42 PM IST | Updated on: Jun 01, 2017 08:25 PM IST

حیدرآباد : ذبیحہ کے لئے مویشیوں کی خرید و فروخت پر امتناع سے متعلق مرکز کے اعلامیہ پر جاری سیاست کے درمیان مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے آج کہا ہے کہ مویشی مارکٹوں کو باقاعدہ بنانے کے لئے کھلے عام مارکٹ میں مویشیوں کی فروختگی پر امتناع عائد کیا گیا ہے ۔اسے مذہب کی نظر سے نہیں دیکھا جانا چاہئے۔ بیف پارٹی کے نام پر چند افراد گؤ کشی کے مسئلہ پر سیاست کرتے ہوئے ملک کے حالات کو مشتعل کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ یہ ملک کی سالمیت کے لئے خطرناک ہے۔ اس طرح کی کوششوں کو حکومت برداشت نہیں کرے گی۔

انہوں نے حیدرآباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے دعوی کیا کہ ملک میں فرقہ وارانہ تشدد کے واقعات میں 80تا90فیصد کمی ہوئی ہے ۔ مرکزی وزیر نے کہا کہ تلنگانہ میں بی جے پی کی شدید ضرورت ہے ۔ 2019کے انتخابات میں بی جے پی ریاست میں اقتدار حاصل کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ اقلیتوں کی ترقی کے لئے مرکزی حکومت سنجیدگی سے کام کررہی ہے ۔

مویشی مارکٹوں کو باقاعدہ بنانے کیلئے کھلے عام مارکٹ میں جانوروں کی فروخت پر امتناع عائد کیا گیا : نقوی

مختار عباس نقوی نے کہا کہ نریندر مودی کی قیادت میں مرکزی حکومت دنیا بھر میں ہندوستان کو ایک مقام پر لاکھڑا کیا۔ کشمیر میں دہشت گردی کی حوصلہ افزائی کرنے والے پاکستان کو عالمی ممالک کے سامنے یکہ و تنہا کردیا۔ انہوں نے واضح کیا کہ ملک میں ایک ہی نوعیت کا قانون رہنے کے باوجود چند ریاستیں ان قوانین پر عمل نہیں کررہی ہیں جو باعث تشویش ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز