قومی اقلیتی کمیشن نے گئو رکشا کے نام پر قتل کا نوٹس لیا ، ریاستی حکومتوں سے رپورٹس طلب

Jul 16, 2017 07:24 PM IST | Updated on: Jul 16, 2017 07:24 PM IST

حیدرآباد: قومی اقلیتی کمیشن کے صدرنشین غیورالحسن رضوی نے کہا ہے کہ گاؤ رکھشا کے نام پر ہجوم کے ذریعہ قتل کئے جانے کے واقعات کا قومی اقلیتی کمیشن نے سخت نوٹ لیا ہے اور متعلقہ ریاستی حکومتوں سے اس خصوص میں رپورٹس طلب کی گئی ہے ۔ا نہو ں نے حیدرآباد کے دورہ کے موقع پر ایک پرائیویٹ ٹی وی چینل سے بات کرتے ہوئے کہا کہ گئو رکشا کے نام پر گئو رکشکوں  کی جانب سے لوگوں کو قتل کرنے کے واقعات کا سنجیدہ نوٹ لیا گیا ہے اور کمیشن نے اپنے طور پر کارروائی کرتے ہوئے رپورٹ طلب کی ہے ۔ انہو ں نے کہا کہ متعلقہ ریاستوں کی حکومتوں کی کارروائی سے کمیشن مطمئن ہے ۔

مغربی بنگال میں سوشیل میڈیا کے ذریعہ حال ہی میں پھوٹ پڑے فسادات کے مسئلہ پر کئے گئے ایک سوال کے جواب میں انہو ں نے کہا کہ کمیشن کے پاس اس سلسلہ میں انتظامیہ کو متوجہ کرنے کے لئے کوئی عرضی داخل نہیں کی گئی ہے ۔ انہو ں نے کہا کہ حکومت جب کوئی چیز کمیشن کے پاس بھیجتی ہے یا پھر کمیشن سے جب نمائندگی انفرادی طور پر کی جاتی ہے تو اس پر ضرور کارروائی کی جاتی ہے ۔ تاہم اس معاملہ میں کمیشن کے پاس ہنوز کو ئی عرضی نہیں آئی ہے ۔ انہو ں نے سرکاری اسکیمات اور اقلیتوں میں بیداری پیدا کرنے کے لئے کمیشن کی جانب سے کئے جارہے اقدامات کے تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ کمیشن اور حکومت کی طرف سے مختلف مقامات پر بیداری پروگراموں کا اہتمام کیا جارہا ہے تاکہ اقلیتوں کو سرکاری اسکیمات سے فائدہ ہوسکے۔

قومی اقلیتی کمیشن نے گئو رکشا کے نام پر قتل کا نوٹس لیا ، ریاستی حکومتوں سے رپورٹس طلب

جے این یو کے طالب نجیب کے لاپتہ ہونے کے مسئلہ پر کئے گئے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ملک کی سرکردہ جانچ ایجنسی سی بی آئی اس معاملہ کی جانچ کررہی ہے۔ اسی لئے کمیشن نے اس معاملہ میں مداخلت نہیں کی ہے کیوں کہ سی بی آئی ایک بڑی ایجنسی ہے ۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ اس معاملہ میں کچھ نہ کچھ نتیجہ سامنے آئے گا۔ غیورالحسن رضوی نے حیدرآباد میں ’’ بے مثال اردو ‘‘ اخبار کے 6سال کی تکمیل پر ایک سمینار میں شرکت کی۔ انہوں نے مختلف افراد سے ملاقات کی اور اقلیتوں کے مسائل پر مختلف تنظیموں اور اداروں کی جانب سے کی گئی نمائندگی وصول کی۔ انہو ں نے اقلیتوں کی اسکیمات سے بھی واقفیت کروائی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز